گرین اسٹار کی بین الاقوامی سائنٹفک کانفرنس میں شرکت

گرین اسٹار کی بین الاقوامی سائنٹفک کانفرنس میں شرکت

کراچی (اسٹاف رپورٹر) پاپولیشن سروسز انٹرنیشنل کے خود مختار رکن گرین اسٹار سوشل مارکیٹنگ (گرین اسٹار)نے کراچی میں منعقدہ سترہویں دو سالہ بین الاقوامی سائنٹفک کانفرنس میں بطور اسپانسر شرکت کی۔ جس کا مقصد خواتین کی صحت کو درپیش مسائل کا حل پیش کرنا تھا۔ ’’خواتین کی صحت کو قومی ترقی میں بنیادی اہمیت حاصل ہے‘‘ کے عنوان سے منعقد ہونے والی اس کانفرنس کا اہتمام (Society of Obstetricians & Gynecologists of Pakistan; SOGP)نے گرین اسٹار سوشل مارکیٹنگ کے تعاون سے کیا تھا۔ کانفرنس میں دی انٹرنیشنل فیڈریشن آف گائناکولوجی اینڈ آبسٹریٹرکس (FIGO)کے سابق صدر پروفیسر سبراتنم ارلکماراں (Prof. Sabaratnum Arulkimaran)نے بھی شرکت کی او ر ’ ’Post Pregnancy Contraception: The Way Forward‘‘ کے عنوان سے ہونے والے سیشن میں ’ ’Post Pregnancy Contraception‘‘ کے موضوع پر اظہار خیال کیا۔ پروفیسر سبراتنم ارلکماراں گرین اسٹار سوشل مارکیٹنگ کی خصوصی دعوت پر اس کانفرنس میں شرکت کے لیے کراچی آئے تھے۔کانفرنس میں ماڈریٹر کے فرائض گرین اسٹار سوشل مارکیٹنگ کے چیف ایگزیکٹو آفیسر، ڈاکٹر سید عزیز الرب نے انجام دئیے۔سیشن کا مقصد Postpartum Intrauterine Contraceptive Devices (PPIUCD)کے استعمال اور نتائج ، صحت کے مخصوص مراکز میں PPIUCDکا ادارہ کی سطح پر استعمال،پوسٹ پارٹم اور پوسٹ ایبورشن فیملی پلاننگ ، PPIUCDکے نتائج اور Sub-Dermal Implant، PPIUCD سے تحفظ اوراثرانگیزی اور پرائیویٹ پریکٹس میں ابتدائی تجربہ کے بارے میں بحث کا آغاز کرنا اور آگاہی فراہم کرنا تھا۔اس کے علاوہ کوئٹہ میں PPIUCD کے 100 کیسوں کا جائزہ لیا گیا اور سندھ کے ایک tertiary care اسپتال میں PPIUCD کے نتائج پر بھی پینل میں شریک افراد نے بحث کی۔اس سیشن میں میں ڈاکٹر عزیز الرّب کے ہمراہ جن دیگر افراد نے شرکت کی ان میں نیشنل کونسل فار میٹرنل اینڈ نیونیٹل ہیلتھ(NCMNH) کی ڈاکٹر عذرا احسن، امن کی صدر ، ڈاکٹر شاہدہ زیدی، روٹری اینڈ الٹراساؤنڈ کلینک کی ڈاکٹر طیبہ وسیم، سروسز انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز (SIMS)کی پروفیسر آف گائناکولوجی ، سعدیہ احسن پال ، OMI ہسپتال کی گائناکولوجسٹ، ڈاکٹر عائشہ صدیقہ، بولان میڈیکل کالج، کوئٹہ کی پروفیسر آف گائناکولوجی اور لیاقت یونیورسٹی آف میڈیکل اینڈ ہیلتھ سائنسز ) (LUMHSکی گائناکولوجسٹ ڈاکٹر نصرت نثار نے بھی شرکت کی۔ٓاس موقع پر خطاب کرتے ہوئے، ڈاکٹر سید عزیز الرّب نے کہا، ’’PPIUCDایک محفوظ، reversible اور طویل المیعاد مانع حمل ہے جس سے پاکستان کی بڑے پیمانہ پر ایسی ضرورت کو پورا کیا جا سکتا ہے۔ Intrauterine Contraceptive Devices کا پیدائش کے بعد ) 10منٹس یا48گھنٹوں کے اندر) داخلہ ایسی خواتین کو موقع فراہم کرتاہے جس کے ذریعہ ایسی خواتین جو اپنی اور اپنے بچہ کی صحت کے حوالہ سے بہت حساس ہوں، اور انہیں ایک مؤثر مانع حمل طریقہ کی ضرورت ہو۔ انٹراپارٹم کیئر کے دوران خواتین سے رابطہ کو PPIUCDکے فروغ کی غرض سے بہت اہم خیال کیا جاتا ہے۔ ہم ڈاکٹر آرل کے شکرگزار ہیں کہ وہ پاکستان تشریف لائے اور کانفرنس کے دوران خواتین کی صحت کے حوالہ سے درپیش مسائل کو اجاگر کیا۔‘‘

مزید : کھیل اور کھلاڑی /راولپنڈی صفحہ آخر