بھارتی اشتعال انگیزی کے خلاف چترال میں احتجاجی مظاہرہ

بھارتی اشتعال انگیزی کے خلاف چترال میں احتجاجی مظاہرہ

چترال(نمائندہ )پلوامہ واقعہ کے بعدپیداہونے والی صورتحال بھارت عوام کی طرف سے اشتعال انگیزبیانات کے خلاف چترال میں زبردست احتجاجی مظاہرہ ہوا اور احتجاجی جلسے میں تمام سیاسی جماعتوں ومختلف مکتبہ کے لوگوں نے شرکت کیاوربھارتی حکومت کی طرف سے جنگ کی دھمکیوں کاجواب دینے اوراس نازک موقع پراپنے سپاہ کاحوصلہ بلندکرے اورہرقسم کی تعاون کی یقین دہانی کیلئے چترال کے سیاسی ومذہبی جماعتوں کے رہنماؤں کی قیادت میں دروش،کالاش ویلیز،ایون ،گرم چشمہ اوراپرچترال سے ریلی چترال شہرپہنچ کرہزاروں کی تعدادمیں اقالیق چوک میں احتجاجی جلسے کاانعقادکیاگیا ۔جس میں چترال کے سیاسی مذہبی جماعتوں کے قائدین اورعلماء کرم نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ بھارت پلوامہ واقعہ کا ذمہ دار پاکستان کو ٹھہرانے سے گریز کرے۔اب بھارت کو22کروڑپاکستانی عوام سے جنگ لڑنی ہوگی جوکہ پاکستان کے ہراول دستے کاکام کریں گے۔تمام شیطانی قوتیں یادرکھیں کہ کسی بھی مسلم ملک پرحملہ عالم اسلام پرحملہ اوردہشت گردی سمجھاجائے گا۔انہوں نے مذید کہا کہ نریندر مودی کو انتخابی سازش میں کا میاب نہیں ہونے دیں گے ۔اور پلوامہ واقعہ بھارت کا اپنا کیا ہو امنصوبہ ہے اور چترال کے عوام نے کشمیر کے جنگ آزادی میں بھر پور کردار ادا کی ہے اور بھارت ہوش کے ناخن لے ورنہ ان کو بربادی سے کوئی نہیں روک سکتاہے۔اور پاکستان کے عوام پاک فوج کے شانہ بشانہ ہر قسم کی قربانی دینے کے لئے تیار ہے

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...