آج ملک میں مایوسی ،حالات میں بہتری کی امید نظر نہیں آتی ، شاہد خاقان

آج ملک میں مایوسی ،حالات میں بہتری کی امید نظر نہیں آتی ، شاہد خاقان

مانسہرہ (این این آئی) سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ آج ملک میں مایوسی ہے، امید نظر نہیں آتی کہ حالات بہتر ہوں گے ،پاکستان کے عوام عمران خان کی حکومت سے خیر کی توقع نہیں کرسکتے، جمہوریت کا تحفظ کریں گے اور پی ٹی آئی حکومت کو گھر بھیجیں گے، نوازشریف کی ضمانت کی درخواست پر جو بھی فیصلہ آیا قبول کرینگے ۔ اتوار یہاں سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 26 فروری کو پیغام دینا ہے کہ عوام حکومت کو مسترد کرتے ہیں،یہ ملک کی بدنصیبی ہے کہ 25 جولائی کا الیکشن چوری کیاگیا اور عمران خان جیسا وزیراعظم مسلط کیا گیا۔ سندھ اسمبلی کے اسپیکر کی گرفتاری پرشدید خدشات ہیں ، انہیں بغیر کسی الزام کے گرفتارکیا گیا،پنجاب اورکے پی اسمبلی کے اسپیکرز پربھی الزامات ہیں جس ملک میں حکومت ہی اسمبلی نہیں چلانا چاہے اس کا کیا حال ہوگا۔ ہم نے 5 سال گیس بلوں میں ایک روپے کا اضافہ نہیں کیا، بجلی اور گیس کی قیمت میں موجودہ حکومت نے اضافہ کر دیا ،اس حکومت کے چھ ماہ میں جتنی مہنگائی اس کی مثال نہیں ملتی، آج ملک کے حالات خراب ہورہے ہیں،اس کا جواب کسی کے پاس نہیں۔جو الزام نواز شریف پر لگے اس کا قانون میں کہیں وجود ہی نہیں،نواز شریف پر لگے الزامات عمران خان اور وزرا پر لگے تو سب پکڑ میں آجائیں گے،عمران خان اپنے وزرا سے احتساب کا آغاز کریں۔میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے رہنما مسلم لیگ (ن) اور سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ جمہوریت کا تحفظ کریں گے اور پی ٹی آئی حکومت کو گھر بھیجیں گے۔انہوں نے کہاکہ حکومت نااہل اور کرپٹ لوگوں کے حوالے کر دی گئی ہے، پی ٹی آئی حکومت نے عوام پر مہنگائی کا بم گرا دیا، گیس کی قیمت میں 350 فیصد تک اضافہ کیا گیا۔سابق وزیراعظم نے کہا کہ نوازشریف جیل میں ہوتے ہوئے بھی سیاست کا محور ہیں ، ہم جمہوریت کا تحفظ کریں گے اور پی ٹی آئی حکومت کو گھر بھیجیں گے۔ ایک سوال پر انہوں نے کہاکہ نوازشریف کی ضمانت کی درخواست پر عدالت کا جوبھی فیصلہ آیا اسے قبول کرینگے ۔

شاہد خاقان

مزید : صفحہ اول


loading...