اوآئی سے اجلاس میں بھارت بھی مدعو ، شا ہ محمود ، سشما سوراج ملاقات متوقع

اوآئی سے اجلاس میں بھارت بھی مدعو ، شا ہ محمود ، سشما سوراج ملاقات متوقع

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک ، نیوز ایجنسیاں) اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) نے غیر متوقع اقدام کرتے ہوئے دہلی کو بھی اپنے وزرائے خارجہ کے اجلاس میں شرکت کیلئے مدعو کیا ہے۔جہاں پاکستان اور بھارت کے وزرائے خارجہ کے درمیان یکم مارچ کو ابو ظہبی میں ملاقات کے امکان کا اظہار کیا جارہا ہے۔ میڈیارپورٹس کے مطابق ترجمان بھارتی وزارت خارجہ کا کہنا تھا کہ وزیر خارجہ سشما سوراج کو او آئی سی کے 46 ویں سیشن میں شرکت کیلئے مدعو کیا جانا خوش آئند اور 18 کروڑ 50 لاکھ مسلمانوں کی آبادی والے ملک بھارت کی اسلامی دنیا میں شراکت کے اعتراف کا ثبوت ہے۔ یہ اجلاس ابو ظہبی میں یکم اور 2 مارچ کو منعقد ہوگا جس میں متحدہ عرب امارات کے وزیر خارجہ شیخ عبداللہ بن زید بن النہیان نے انہیں ’’اعزازی مہمان‘ ‘کے طورپر مدعو کیا۔ بھارت کو او آئی سی اجلاس کیلئے دعوت دیا جانا، سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے پاکستان اور بھارت کے دورے کے بعد سامنے آیا جنہوں نے دونوں ممالک میں امن پر زور دیا تھا۔ دوسری جانب وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے سیکریٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ اور وزارتِ خارجہ کے اعلیٰ حکام کے ہمراہ کرائسز مینجمنٹ سیل کا دورہ کیا جہاں تفصیلی بریفنگ دی گئی ۔ علاوہ ازیں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے سابق خارجہ سیکریٹریز سے بھی ملاقات کی جس میں انکے ساتھ مقبوضہ جموں و کشمیر کی صورتحال سمیت متعدد اہم خارجہ پالیسی امور پر مشاورت کی گئی ۔وزیرخارجہ نے اس موقع پر کہاکہ یہ مشاورتی اجلاس مقبوضہ کشمیر کی بگڑتی ہوئی صورتحال اوربھارتی جارحانہ عزائم کو پیش نظر رکھتے ہوئے طلب کیا گیا تھا،سابقہ سیکرٹریز خارجہ اور سفارتکاروں سے مشاورت کا مقصد ان کے وسیع تجربات سے فائدہ اٹھاتے ہوئے، موجودہ صورتحال میں ایک جامع اور مربوط لائحہ عمل مرتب کرنا تھا،وزیر خارجہ نے کہا کہ سابق خارجہ سیکریٹریز کے ساتھ مقبوضہ جموں و کشمیر کی صورتحال سمیت متعدد اہم خارجہ پالیسی امور پر مشاورت خاصی سود مند رہی ۔شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ہماری کوشش ہوگی کہ مشاورت کا یہ سلسلہ آئندہ بھی تواتر کے ساتھ جاری رہے۔ادھر وزیر خارجہ نے میڈیا بریفنگ میں بھارت کوخبردار کیا ہے کہ بی جے پی سیاسی مقاصد کیلئے جنگی جنونیت پھیلانا بندکرے،ہندوستان ہمیں مرعوب کرنے یا دباؤ میں لانے کا خیال ذہن سے نکال دے، پاکستان کی طرف میلی آنکھ سے دیکھا تو پوری قوم اپنی مسلح افواج کے ساتھ بند مٹھی کی طرح متحد ہے،بھارت مقبوضہ کشمیر میں مزید دس ہزاز فوج بھیج رہا ہے ،سرینگر میں نوجوانوں کو سرعام پیٹا و گرفتار کیا جارہا ہے ، ان کی املاک کو جلایا جارہا ہے،پاکستان کشمیریوں کے حق خودارادیت کیلئے متحد ہو کر کھڑاہے۔ساری صورتحال کے مدنظر وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے 24 سے 27 فروری تک شیڈول شدہ جاپان کا اہم دورہ منسوخ کردیا۔ذرائع کے مطابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کے دورے سے متعلق نئی تاریخوں کا اعلان بعد میں کیا جائے گا۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...