تہران میں ہزاروں پاکستانی طلبا پاسپورٹ کی سہولت سے محروم

تہران میں ہزاروں پاکستانی طلبا پاسپورٹ کی سہولت سے محروم

اسلام آباد ( آن لائن ) تہران میں پاکستانی سفارت خانے کی غفلت کی وجہ سے ہزاروں پاکستانی پاسپورٹ کی سہولت سے محروم ، بیرون ملک پاکستانیوں نے وزیر اعظم عمران خان اور صدرمملکت ڈاکٹر عارف علوی سے نوٹس لینے کا مطالبہ کردیا۔ایران میں زیر تعلیم گلگت بلتستان ، خیبر پختونخواہ اور آزاد کشمیر کے طلباء نے ایک اجلاس میں پاکستانی سفارت خانے کی جانب سے توجہ نہ دینے پر احتجاج کیا۔ طلباء تنظیموں کے راہنماؤں کا کہنا ہے کہ پاکستانی پاسپورٹ حاصل کرنا ہر پاکستانی کا بنیادی حق ہے تاہم تہران میں موجود پاکستانی سفارت خانہ اس سلسلے میں تعاون نہیں کررہاہے ،اجلاس میں جامعہ روحانیت بلتستان، جامعہ روحانیت گلگت، جامعہ روحانیت نگر، جامعہ روحانیت سندھ ، جامعہ روحانیت خیبر پختونخواہ ، اور انجمن علمی وفرہنگی سحرآزاد کشمیر اور مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے نمائندوں نے شرکت کی۔تنظیموں کے مسؤلین نے کہا کہ انہوں نے اپنے طور پر پاکستان کی وزارت خارجہ وداخلہ نیز مختلف وزرا اور سفارت خانے کے مختلف عہدیداروں سے بات کی اور درخواستیں پہنچائی ہیں لیکن نو مہینے سے کوئی شنوائی نہیں ہو رہی۔اراکین اجلاس نے کہا کہ ہم نے ان نو ماہ میں بہت ذلت اٹھائی اور بہت درخواستیں جمع کرائیں اور بہت منت سماجت کرلی لیکن ہماری حب الوطنی، شرافت اور قانونی چارہ جوئی کو ہماری کمزوری سمجھ کر ہمیں نظر انداز کیا گیا۔ اس سلسلے میں ترجمان دفترخارجہ ڈاکٹر محمد فیصل سے بھی رابطہ کیا گیا تاہم انکی جانب سے کوئی جواب موصول نہیں ہوا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر /راولپنڈی صفحہ آخر


loading...