مرد پولیس اہلکاروں کے لئے فحش ڈانس کرنے والی خاتون اہلکار نوکری سے برطرف

مرد پولیس اہلکاروں کے لئے فحش ڈانس کرنے والی خاتون اہلکار نوکری سے برطرف
مرد پولیس اہلکاروں کے لئے فحش ڈانس کرنے والی خاتون اہلکار نوکری سے برطرف

  


ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک) روس میں مردوں کا ایک دن منایا جاتا ہے جس کی روایت ہے کہ اس روز خواتین مردوں کو تحفے تحائف دیتی ہیں۔ گزشتہ دنوں یہ تہوار منایا گیا جس پر روسی پولیس کی ایک خاتون اہلکار نے ساتھی مرد ملازمین کے لیے ایسی شرمناک پارٹی کا اہتمام کر ڈالا کہ اسے نوکری سے ہی نکال دیا گیا۔ میل آن لائن کے مطابق اس خاتون پولیس اہلکار نے مردوں کے دن پر اپنے دو درجن سے زائد مرد ساتھی ملازمین کو پارٹی میں آنے کی دعوت دی، جہاں وہ ان سب کے سامنے فحش ڈانس کرتی رہی۔

واقعے کے کچھ ہی دیر بعد کسی شخص نے اس پارٹی اور خاتون پولیس اہلکار کے فحش ڈانس کی ویڈیو انسٹاگرام پر لیک کر دی جو جنگل کی آگ کی طرح پھیل گئی اور پولیس حکام تک بھی پہنچ گئی، جس پر انہوں نے فوری نوٹس لیا اور اگلے ہی روز اس خاتون کو نوکری سے فارغ کر دیا۔پولیس حکام کا کہنا ہے کہ اس خاتون کی یہ حرکت پولیس کے محکمے کے لیے شرمساری کا باعث بنی ہے۔رپورٹ کے مطابق روس میں یہ تہوار سوویت یونین کے دور سے منایا جا رہا ہے۔ تب اس کا نام ’ریڈ آرمی ڈے‘ ہوتا تھا۔ اب اسے سرکاری سطح پر ملک کے محافظوں کا دن کہا جاتا ہے تاہم عوامی سطح پر اسے مردوں کا دن کے نام سے پکارا جاتا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...