اورنج ٹرین کیلئے ٹرانسمیشن لائن بچھانے سے روکنے سے متعلق حکم امتناعی میں توسیع

اورنج ٹرین کیلئے ٹرانسمیشن لائن بچھانے سے روکنے سے متعلق حکم امتناعی میں ...

  



لاہور(نامہ نگارخصوصی)چیف جسٹس لاہورہائی کورٹ مسٹر جسٹس مامون رشید شیخ نے میٹرواورنج ٹرین منصوبے کے نام پر درختوں کی کٹائی کے خلاف دائر درخواست پرکینال روڈ پرلیسکو کو تاحکم ثانی ٹرانسمیشن لائن بچھانے سے روکنے کے اپنے حکم میں 28فروری تک توسیع کردی،عدالت نے آئندہ سماعت پرڈی جی ماحولیات اور ڈی جی پی ایچ اے کو بھی طلب کرلیا ہے،کیس کی سماعت شروع ہوئی تو لیسکو کے وکیل نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ کاٹے جانے والے عام درخت تھے،اگر حکم امتناعی ختم نہ کیا گیا تو لاہور لوڈشیڈنگ میں ڈوب جائے،حکم امتناعی برقرار رہنے سے اورنج لائن ٹرین بھی نہیں چل سکے گی،جس پر چیف جسٹس نے کہا کہ ڈویلپمنٹ پراجیکٹ بھی چلنے چاہئیں لیکن ماحولیاتی آلودگی کا بھی خیال رکھنا چاہیے، چیف جسٹس نے مزید ریمارکس دیئے کہ ترقیاتی منصوبوں کے ساتھ ماحولیاتی آلودگی کا بھی خیال رکھنا ہوگا،عدالت نے استفسارکیاکہ درخت کاٹنے کی بجائے دوسری جگہ منتقل کیوں نہیں کئے گئے،چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ ایک ملین درختوں کی بات کرتے ہیں،دوسری جانب درخت کاٹ رہے ہیں۔ سرکاری وکیل نے کہا یہ عام درخت تھے جو کاٹے گئے، درخت بڑی تیزی سے اگ آتے ہیں۔چیف جسٹس نے کہا کہ اگر تیزی سے کوئی درخت اگے تو کیا اسے کاٹ دینا چاہیے؟ کیس کی مزید سماعت 28فروری کو ہوگی۔

درخت،کیس

مزید : صفحہ آخر