ملک میں آئندہ پانچ سال تک بجلی کی قلت پیدا نہیں ہوگی

ملک میں آئندہ پانچ سال تک بجلی کی قلت پیدا نہیں ہوگی

  



اسلام آباد (این این آئی) قومی اسمبلی کی توانائی کمیٹی کو بتایاگیا ہے کہ اس وقت ملک میں بجلی کی کوئی قلت نہیں ہے،آئندہ پانچ سال کیلئے بھی کوئی قلت نہیں ہوگی۔ پیر کو چوہدری سالک حسین کی زیر صدارت قومی اسمبلی قائمہ کمیٹی توانائی کا اجلاس ہواجس میں وفاقی وزیر توانائی عمر ایوب بھی شریک ہوئے۔اجلاس میں وزارت توانائی کے ذیلی اداروں کی کارکردگی سے متعلق بریفنگ دی گئی۔ بتایاگیاکہ اس وقت پاکستان کی توانائی پیدا کرنے صلاحیت 36ہزار میگاواٹ ہے۔ عمر ایوب نے کمیٹی کو بتایا کہ سندھ میں ہوا سے 850میگاواٹ بجلی کی جا رہی ہے۔ بتایاگیاکہ آئندہ پانچ سال کیلئے ملک میں بجلی کی کوئی قلت نہیں ہوگی۔2040تک بجلی حاصل کرنے کیلئے پلاننگ کی گئی ہے۔ 2030 تک انرجی مکس میں متبادل توانائی کا حصہ 30 فیصد تک ہوگا۔چیئر مین کمیٹی نے کہاکہ آر ایل این جی پلانٹس میں دگنی قیمت پر لگائے گئے،قیمتوں کے تعین کے حوالے سے نیپرا کو بلائیں گے۔بتایاگیا کہ لاکھڑا پاور پلانٹ 1994میں بنایا گیا اور صرف ایک سال چلا، سینیٹ کمیٹی نے بھی تحقیقات کے بعد کہا کہ لاکھڑا پاور پلانٹ چلانا فائدے میں نہیں ہوگا۔بریفنگ کے دور ان بتایاگیا کہ دنیا کوئلے کا استعمال ختم کر رہی ہے ہم اس کو بڑھا رہے ہیں،سرکولر ڈیٹ کو کم کرنے کیلئے ٹیرف کو رئشنلائز کرنا ہوگا،کابینہ کو نئی پالیسی پر بریفنگ دیں گے۔بریفنگ میں بتایاگیا کہ دو بجے سے گیارہ بجے تک ٹیوب ویل کا دگنا بل آتا ہے،ٹیوب ویلز پر حکومت سبسڈی بڑھائے۔

قائمہ کمیٹی

مزید : صفحہ آخر