رواں مالی سال ٹیکس ریکوری میں 2ارب سے زائد اضافہ متوقع

  رواں مالی سال ٹیکس ریکوری میں 2ارب سے زائد اضافہ متوقع

  



ملتان (نیوز رپورٹر) حکومت پنجاب کے حالیہ اقدامات سے معاشی سرگرمیوں میں بہتری آرہی ہے جس کے مثبت اثرات ٹیکس ریکوری پر بھی مرتب ہورہے ہیں گذشتہ مالی سال کے مقابلے میں رواں مالی سال ٹیکس ریکوری میں 2 ارب سے زائد اضافہ متوقع ہے ان خیالات کا اظہار کمشنر پنجاب ریونیو اتھارٹی (پی آر اے) ملتان ریجن ثاقب علی عطیل نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ حکومتی پالیسی کے مطابق(بقیہ نمبر38صفحہ12پر)

ٹیکس گزاروں کو ہرممکن سہولیات کی فراہمی کو یقینی بناتے ہوئے سیلف اسسمنٹ کے تحت ٹیکس ریکوری میں بہتر نتائج خوش آئند ہیں اور پختہ یقین ہے کہ ملک میں نہ صرف ٹیکس کلچر پنپ رہا ہے بلکہ حکومت کی معاشی پالیسی کی سمت بھی درست ہے آئندہ سالوں میں سروسز سیکٹر سے ٹیکس ریکوری کے حوالے سے مزید بہتر نتائج سامنے آئیں گے ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ گذشتہ مالی سال 2018 19ء میں ملتان ریجن کے لیئے 3 ارب روپے کے ٹیکس اہداف مقرر کیئے گئے اور پی آر اے کی ٹیموں نے 3 ارب 6 کروڑ روپے کی ریکوری کی جبکہ جون سے جولائی 7 ماہ میں 1 ارب 38 کروڑ روپے کی ریکوری کی گئی جبکہ رواں مالی سال 2019 20ء کے لیئے 5 ارب روپے کے ٹیکس اہداف مقرر کئیے گئے ہیں اور جون سے جولائی تک 2 ارب 12 کروڑ روپے کی ریکوری کی جاچکی ہے انہوں نے کہا کہ رواں مالی سال کے پہلے 7 ماہ کے دوران ٹیکس ریکوری میں 52 فیصد ریکارڈ اضافہ ہوا ہے ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ پی آر اے کے ریکارڈ میں سروسز فراہم کرنیوالے 68 پرائیویٹ ادارے رجسٹرڈ ہیں تاہم رواں ماہ مزید سروسز سیکٹر سے ادارے رجسٹرڈ کئیے گئے ہیں جن میں ڈیزائنرز، کنسٹریکشن، اپارٹمنٹ رینٹل سروسز، میڈیکل سروسز 15 سو روپے سے زائد فیس وصول کرنے والے 5 فیصد ٹیکس کی ادائیگی کے پابند ہونگے انہوں نے کہا کہ حکومت کی معاشی ترجیحات سے ٹیکس ریکوری بہتر ہونے کے ساتھ معیشت بھی مستحکم ہورہی ہے۔

ریکوری

مزید : ملتان صفحہ آخر