ابراہیم مانیکا کیخلاف حبس بے جاکی درخواست پولیس بیان کے بعد خارج

  ابراہیم مانیکا کیخلاف حبس بے جاکی درخواست پولیس بیان کے بعد خارج

  



  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ کے مسٹرجسٹس انوارالحق پنوں نے خاتون اول کے بیٹے ابراہیم مانیکا کی مبینہ ایماء پر 2 شہریوں احمد حسن اور اعجاز کو حبس بے جا میں رکھنے کے خلاف دائر درخواست پولیس کے اس بیان کے بعد خارج کردی کہ احمد حسن اور اعجاز کے خلاف تھانہ ہیئر میں امانت میں خیانت کا مقدمہ درج ہے، انہیں قانونی طور پر گرفتار کیا گیاہے،گزشتہ روز ابراہیم مانیکا عدالتی حکم پر عدالت میں پیش ہوئے،سرکاری وکیل نے عدالت کوبتایا کہ درخواست گزار کے بھائیوں کوپولیس نے کسی کے کہنے پر حبس بے میں نہیں رکھا بلکہ درخواست آنے پر ان کے خلاف تھانہ ہیئرپولیس نے 20 فروری کو امانت میں خیانت کا مقدمہ درج کیا ہے۔درخواست گزار محمد حسن کی طرف سے موقف اختیار کیا گیا تھا کہ ابراہیم مانیکا کو عدالتی نوٹس کے بعد ہمیں دھمکی آمیز فون آیا،ابراہیم مانیکا کو 10 لاکھ دے چکے ہیں،وہ مزید ڈیڑھ کروڑ روپے کا تقاضا کر رہے ہیں،فاضل جج نے کہا کہ مقدمہ درج ہونے کی صورت میں حبس بے جا کا کیس نہیں بنتا اس لئے درخواست مسترد کی جاتی ہے۔

ابراہیم مانیکا

مزید : پشاورصفحہ آخر