بھارت،پاکستان کا نعرہ بلند کرنے والی لڑکی کے قتل پر10لاکھ کا انعام

      بھارت،پاکستان کا نعرہ بلند کرنے والی لڑکی کے قتل پر10لاکھ کا انعام

  



بنگلور(آئی این پی)چند روزقبل بنگلورو میں شہریت ترمیمی قانون کی مخالفت میں جلسے کے دوران پاکستان زندہ باد کے نعرے لگانے والی ایک نوجوان لڑکی کے قتل پر سری رام سینا تنظیم نے دس لاکھ روپے انعام رکھا ہے۔ بین الاقوامی میڈیاکے مطابق تنظیم کے رکن سنجیو ماردی نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ امولیا لیونا کو رہا نہ کرے ورنہ وہ اسے زندہ نہیں چھوڑے گا۔امولیا نے بنگلورو میں اے آئی ایم آئی ایم کی منعقدہ ایک ریلی میں پاکستان زندہ باد کا نعرہ لگایا تھا جس کے بعد اس کے خلاف مختلف دفعات کے تحت کیس درج کیا گیا۔ریاست کرناٹک کے شہر بنگلور میں ایم آئی ایم کی جانب سے شہریت قانون کے خلاف ایک ریلی منعقد کی گئی تھی، ریلی میں اسدالدین اویسی بھی موجود تھے۔ اسی دوران امولیا نے پاکستان زندہ باد کا نعرہ لگایا تھا۔امولیا کے نعرہ لگانے کے بعد اسٹیج پر موجود سبھی لوگوں نے اس کو خاموش کروا کر اس سے مائک چھین لیا، اس موقع اسدالدین اویسی اور ایک سینیئر پولیس افسر بھی موجود تھے۔ پولیس نے امولیا کو حراست میں لے کر مختلف دفعات کے تحت کیس درج کیا، جس کے بعد امولیا نے ضمانت کے لیے درخواست دی۔بنگلور کے جوڈیشل مجسٹریٹ نے امولیا کی ضمانت کی درخواست مسترد کر دی تھی، اور اسے تین دن عدالتی تحویل میں رکھنے کا حکم دیاتھا۔

رام سینا

مزید : علاقائی