کیا کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے پشاور زلمی کے خلاف بال ٹیمپرنگ کی شکایت کی ہے ؟ کرکٹ کے میدان سے بڑی خبر آ گئی

کیا کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے پشاور زلمی کے خلاف بال ٹیمپرنگ کی شکایت کی ہے ؟ کرکٹ ...
کیا کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے پشاور زلمی کے خلاف بال ٹیمپرنگ کی شکایت کی ہے ؟ کرکٹ کے میدان سے بڑی خبر آ گئی

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )پاکستان کرکٹ بورڈ نے تصدیق کی ہے کہ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی جانب سے پشاور زلمی کے خلاف میچ میں بال ٹیمپرنگ سے متعلق میچ ریفری روشن ماہناما کو کوئی شکایت موصول نہیں ہوئی ہے ۔

تفصیلات کے مطابق دونوں ٹیموں کے درمیان پاکستان سپر لیگ 2020ءکا راو¿نڈ میچ 22 فروری کو نیشنل سٹیڈیم کراچی میں کھیلا گیا تھا۔

میچ کے بعد پریس کانفرنس میں جب کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے کپتان سرفراز احمد سے سوال کیا گیا کہ کیا گلیڈی ایٹرز نے زلمی کے خلاف بال ٹیمپرنگ کی شکایت کی ہے؟تو سرفراز نے کہا تھا کہ پروٹوکول کے مطابق اس معاملے پر میچ رپورٹ میں اپنا مشاہدہ درج کردیا ہے تاہم انہوں نے اس معاملے میں مزید تفصیلات بتانے سے گریز کیا۔

پی ایس ایل 2020ءکے کوڈ آف کنڈکٹ کے تحت کسی بھی ٹیم کی جانب سے باضابطہ شکایت ٹیم منیجر کی جانب سے درج کروائی جاتی ہے۔ میچ ریفری کو یہ شکایت میچ ختم ہونے کے 48 گھنٹوں کے اندر درج کروانا لازمی ہوتا ہے تاہم پی سی بی کے مطابق اس دوران میچ ریفری روشن ماہناما کو کوئی شکایت موصول نہیں ہوئی اور 48 گھنٹے پر مشتمل وقت اب ختم ہوچکا ہے۔

چیف ایگزیکٹو پاکستان کرکٹ بورڈ وسیم خان کا کہنا ہے کہ ہمیں معلوم ہے کہ گیند کی حالت تبدیل کرنے سے متعلق بیان جاری کرنے سے پہلے نہ تو ٹھوس شواہد فراہم کیے گئے اور نہ ہی اس حوالے سے باضابطہ درخواست جمع کروانے سے متعلق مخصوص طریقہ کار کو اختیار کیا گیا۔ چیف ایگزیکٹو پی سی بی نے کہا کہ اس کیس میں میچ ریفری کو 24فروری بروز پیر کی شام 6 بجے تک درخواست جمع کروانا لازمی تھا۔

وسیم خان نے کہاکہ مخصوص طریقے کو اختیار کیے بغیر اتنا غیرذمہ دارانہ بیان جاری کرکے ایونٹ کی ساکھ کو مجروح اور غیرملکی کھلاڑیوں کو شکوک و شبہات میں ڈالاگیا۔انہوں نے کہا کہ وہ کھلاڑیوں سے احتیاط برتنے اور ذمہ داری کا مظاہرہ کرنے کی درخواست کرتے ہیں۔

مزید : کھیل /PSL /PSL News Update