گوگل نے پلے اسٹور سے انتہائی مقبول 600 ایپس کو ہٹادیالیکن دراصل وجہ کیا بنی؟

گوگل نے پلے اسٹور سے انتہائی مقبول 600 ایپس کو ہٹادیالیکن دراصل وجہ کیا بنی؟
گوگل نے پلے اسٹور سے انتہائی مقبول 600 ایپس کو ہٹادیالیکن دراصل وجہ کیا بنی؟

  

نیویارک(ڈیلی پاکستان آن لائن)انٹرنیٹ کی دنیا کے سب سے بڑے نام گوگل نے پلے اسٹور سے انتہائی مقبول 600 ایپس کو ہٹادیا۔ گوگل انتظامیہ کا کہنا ہے کہ ان ایپس کو ہٹانے کی وجہ ان پر دکھائے جانے والے بے تحاشہ اشتہارہیں۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق گوگل کی جانب سے جاری اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ پلے اسٹور پر موجود 600 سے زائد ایسی ایپس پر پابندی عائد کردی گئی ہے جو صارفین کو بہت زیادہ اشتہارات دکھا رہی تھیں۔

گوگل نے ان ایپس کے نام تو ظاہر نہیں کئے البتہ یہ ضرور بتایا گیا ہے کہان کو ساڑھے چار ارب سے زائد بار ڈاو¿ن لوڈ کیا گیا جس سے ان ایپس کی مقبولیت کااندازہ ہوتا ہے۔پلے سٹور سے ہٹائی گئی ایپس چین ، ہانگ کانگ، سنگارپور اور بھارت میں تیارکی گئی تھیں۔

یاد رہے کہ گزشتہ دنوں برطانیہ اور جاپان سے تعلق رکھنے والی ٹیکنالوجی کمپنیز کے ماہرین نے گوگل پلے اسٹور پر موجود ایپس کی نشاندہی کی تھی۔برطانیہ کی ہارڈ ویئر اینڈ سافٹ ویئر سیکیورٹی کمپنی سوفوس نے بھی اینڈرائیڈ موبائل استعمال کرنے والے کو آگاہ کیا تھا کہ اینڈرائیڈ آپریٹنگ سسٹم پر21 ایسی ایپلیکیشنز ہیں جو صارفین کیلئے کسی بھی بڑے خطرے کا باعث بن سکتی ہیں۔

سوفوس کی رپورٹ میں بتایا گیا تھا کہ مذکورہ ایپس بنانے والی کمپنیاں صارفین کو بہت زیادہ اشتہارات دیکھنے پرمجبور کرتی ہیں جس کی وجہ سے انہیں ہزاروں پاو¿نڈز کے نقصان کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

مزید :

سائنس اور ٹیکنالوجی -