نوازشریف کی ضمانت میں مزید توسیع کی درخواست مسترد

نوازشریف کی ضمانت میں مزید توسیع کی درخواست مسترد
نوازشریف کی ضمانت میں مزید توسیع کی درخواست مسترد

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)پنجاب کابینہ نے نوا زشریف کی ضمانت میں توسیع کی درخواست مستردکردی، کابینہ اراکین نے وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے کہا ہے کہ وہ اپنے اختیارات استعمال کرتے ہوئے نوازشریف کو واپس لائیں۔کابینہ کے فیصلے کے مطابق نواز شریف سے جو طبی رپورٹس طلب کی گئی تھیں وہ فراہم نہیں کی گئیں جبکہ دستیاب رپورٹس کی بنیاد پر خصوصی کمیٹی اور میڈیکل بورڈ مزید توسیع دینے کے خلاف تھے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق پنجاب کابینہ کے ایک اجلاس میں اراکین کی اکثریت نے نواز شریف کی ضمانت میں توسیع کی درخواست کو مسترد کردیاہے۔

پنجاب کے وزیر قانون راجہ بشارت نے کابینہ کے اجلاس کے بعد  پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بتایا کہ 17 جنوری کو میڈیکل بورڈ نے نواز شریف کے معالجین نے مخصوص نکات پر معلومات طلب کی تھیں مگر جب ان کی طرف سے مطلوبہ رپورٹس فراہم نہیں کی گئیں تو کمیٹی نے انھی رپورٹس کی بنیاد پر فیصلہ کیا جو کہ پہلے فراہم کی گئی تھیں۔ان کا کہنا تھا کہ میڈیکل بورڈ نے نواز شریف کی رپورٹس پر عدم اعتماد کا اظہار کیا تھا اور کمیٹی نے بھی جو سفارشات دیں ان کی روشنی میں یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ نواز شریف کی ضمانت میں توسیع نہیں کی جا سکتی۔

رپورٹس کے مطابق کابینہ کا یہ فیصلہ حتمی ہے۔وزیراعلیٰ کو انہیں واپس لانا ہوگا۔ اس صورتحال کے بعد شریف خاندان کواب مزید توسیع کیلئے عدالت سے رجوع کرنا پڑے گا۔

یاد رہے کہ حکومتی اور لیگی کارکنوں کی ملاقات میں ڈاکٹر عدنان نے نوا شریف کی ضمانت میں توسیع کیلئے مزید دوہفتوں کا وقت مانگاتھا۔ڈاکٹر عدنان کا کہنا تھا کہ دوہفتوں بعد نوازشریف کو ہسپتال میں داخل کیاجائے گا۔

مزید : اہم خبریں /قومی