’سلیکٹڈ سے ہماری مراد یہ ہے کہ جب ایجنسیاں ۔۔۔۔‘قمرالزمان کائرہ نے بلاول بھٹو کے کہے لفظ کی وضاحت کردی

’سلیکٹڈ سے ہماری مراد یہ ہے کہ جب ایجنسیاں ۔۔۔۔‘قمرالزمان کائرہ نے بلاول ...
’سلیکٹڈ سے ہماری مراد یہ ہے کہ جب ایجنسیاں ۔۔۔۔‘قمرالزمان کائرہ نے بلاول بھٹو کے کہے لفظ کی وضاحت کردی

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما کہتے ہیں سلیکٹڈ سے مراد وہ ہے جس کی کامیابی میں ایجنسیاں کردار اداکریں۔انہوں نے کہاعمران خان اپنے تمام وعدوں سے یوٹرن لے چکے ہیں اور اب ان کے اپنے اتحادی ان سے تنگ ہیں۔

تفصیلات کے مطابق پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما قمر الزمان کائرہ نے لاہور میںمیڈیا سے گفتگو کی ہے۔اس دوران پنجاب کابینہ کی جانب سے نواز شریف کی ضمانت میں توسیع نہ دیئے جانے پرصوبائی حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا جبکہ شاہد خاقان عباسی اور احسن اقبال کی عدالتوں سے ضمانتوں کو خوش آئند قراردیا۔

قمرالزماں کہتے ہیں کہ ہم چاہتے ہیں جن جن پر مقدمات ہیں اور وہ جیل میں ہیں تو ان کو ضمانتیں دی جائیں۔ضمانتیں ملنا اچھی باتیں ہیں،ہم چاہتے ہیں سب کو ضمانتیں ملنی چاہئیں۔ میاں صاحب کو علاج کی سہولت ملنی چاہئے۔ان کیلئے سیر سپاٹے کا لفظ مناسب نہیں۔

سلیکٹڈ سے ہماری مرادیہ ہے کہ جس کو پاکستان کی ایجنسیاں اس ببل میں ہوا بھریں ، دیگر جماعتوں کو اس کے ساتھ ملائیں۔ٹی وی چینلز پر مخصوص ماحول بنایا جائے ، حلقے خصوصی انداز سے ترتیب دیے جائیں۔سرکاری مشینری کو استعمال کیاجائے ، مختلف جماعتوں کو توڑ کر ملایا جائے ہم اس کو سلیکٹڈ کہتے ہیں۔واضح رہے کہ وزیراعظم عمران خان کیلئے سلیکٹڈ کا لفظ پہلی بار پاکستانی پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو نے اسمبلی سے خطاب کرتے ہوئے اداکیاتھا۔

انہوں نے کہا بے نظیر واپس آنا چاہتی تھیں، جونیجو صاحب نے اس وقت ضیا سے ٹکر لی اور بی بی کو واپس آنے کا رستہ دیا۔مشرف دور میں ہمیں کہا گیا کہ ہم نے این آر او لیا حالانہ ہم نے نہیں لیا تھا۔عالمی طاقتوں سے بھی بات کی تھی۔بی بی واپس نہ آتیں تو اامریت کا سلسلہ طویل ہوجاتا۔ہمارا صرف عوام سے اتحاد ہے۔

انہوں نے کہاپاکستان کو نہ سنبھالتے، این ایف سی نہ دیتے تو آج پاکستان اس حال میں نہ ہوتا۔اسی پر بی بی نے کہا تھا انہیں واپس آنے دیاجائے۔ اس سب کو لوگوں نے این آر او قراردیا ایسا نہیں ہے۔ نوازشریف نے اور شہباز شریف کو دوبار وطن آنے پر واپس بھیج دیا گیا۔عمران خان اس ملک کی جان چھوڑیں تاکہ اس ملک کو کسی بہتر ڈگر پر ڈالا جاسکے۔

مزید : قومی