ڈونلڈ ٹرمپ نے مسئلہ کشمیر کے حوالے سے ایسی بات کہہ دی کہ دوسرے روز بھی بھارتی میڈ یا کو مر چیں لگا دیں

ڈونلڈ ٹرمپ نے مسئلہ کشمیر کے حوالے سے ایسی بات کہہ دی کہ دوسرے روز بھی بھارتی ...
ڈونلڈ ٹرمپ نے مسئلہ کشمیر کے حوالے سے ایسی بات کہہ دی کہ دوسرے روز بھی بھارتی میڈ یا کو مر چیں لگا دیں

  



نئی دہلی (ڈیلی پاکستان آن لائن ) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے گزشتہ روز پاکستان کے حق میں بیان دینے کے بعد اب بھارت اور پاکستان کے درمیان مسئلہ کشمیر حل کرنے کے لیے ثالثی کی پیشکش کردی ۔

ایک مرتبہ پھر پاکستان اور بھارت کے درمیان ثالثی کی پیشکش کر دی۔نئی دہلی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے امریکی صدر نے کہا کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان مسئلہ کشمیر حل ہونا چاہیے۔ان کا کہنا تھا کہ مسئلہ کشمیر پاکستان اور بھارت کے درمیان پرانا معاملہ ہے، پاکستان اوربھارت کے درمیان مصالحت کے لے تیارہوں، وزیراعظم عمران خان سے بہت اچھے تعلقات ہیں۔

گزشتہ روز احمد آباد سٹیڈیم میں ’نمستے ٹرمپ‘تقریب سے خطاب کرتے ہوئے بھی ڈونلڈ ٹرمپ نے پاکستان کے حق میں بیان دیا تھا جس پر بھارتی میڈ یا کو مرچیں لگ گئی تھیں ۔ان کا کہنا تھا کہ امریکااور پاکستان مل کر دہشت گردتنظیموں اورسرحدی علاقوں میں موجود عسکریت پسندوں کے خلاف کارروائی کررہے ہیں اور امریکا پاکستان کے ساتھ انتہائی مثبت انداز میں کام کررہا ہے،پاکستان کے ساتھ ہمارے تعلقات بے حد اچھے ہیں،ان کوششوں کی بدولت ہی پاکستان کے ساتھ بہتری کے امکانات واضح ہوئے۔

اس پر بھارتی نیوز چینل کے ایک پروگرام میں اینکر پرسن کا کہنا تھا کہ ڈونلڈ ٹرمپ کا ماننا ہے کہ ”امریکہ فرسٹ “،وہ سب سے پہلے امریکہ کو دیکھتے ہیں اور اس بیان پر بھی امریکی صدر نے ’امریکہ فرسٹ‘کے اصول پر عمل کیا ،دہشت گردی سے متعلق ڈونلڈ ٹرمپ نے جس قسم کیا بیان دیا ،اس میں انہوں نے اپنے ملک اور اپنی سوچ کا ذکر کیا اور بھارت میں پاکستان کی تعریف کر کے چلتے بنے۔

مزید : اہم خبریں /قومی