نیب کو نصرت شہباز کیخلاف تادیبی کارروائی سے روکنے کے حکم میں توسیع

نیب کو نصرت شہباز کیخلاف تادیبی کارروائی سے روکنے کے حکم میں توسیع

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


 لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائی کورٹ نے منی لانڈرنگ کیس میں نصرت شہباز کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری اور حاضری استثنیٰ نہ دینے کے خلاف دائر درخواست پر سماعت بغیر کارروائی 30 مارچ تک ملتوی کردی،عدالت نے نیب کو نصرت شہباز کیخلاف تادیبی کارروائی سے روکنے کے حکم میں بھی توسیع کر دی ہے،مسٹرجسٹس سردار سرفراز ڈوگر کی سربراہی میں قائم 2 رکنی بنچ شہباز شریف کی اہلیہ نصرت شہباز کی درخواست پر سماعت کی،درخواست میں چیئرمین نیب اور احتساب عدالت کے جج کو فریق بنایا گیاہے،درخواست گزار کے وکیل کا موقف ہے کہ نصرت شہباز کو منی لانڈرنگ ریفرنس میں ملزمہ بنایا گیا ہے، درخواست گزار 66 سالہ بوڑھی خاتون ہیں اور متعدد امراض میں مبتلا ہے، نصرت شہباز کو علاج کی غرض سے جنوری 2019ء کو برطانیہ جانا پڑا، درخواستگزار کے بیرون ملک جانے تک نیب نے کوئی ریفرنس دائر نہیں کیا تھا، ریفرنس دائر ہونے کے بعد احتساب عدالت میں حاضری سے استثنی کی درخواست بھی دائر کی تھی جو خارج کر دی گئی، حاضری سے استثنی کیلئے میڈیکل سرٹیفکیٹس بھی عدالت میں پیش کئے تھے، احتساب عدالت کو حاضری سے استثنی دینے کی درخواست خارج کرنے اور ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کرنے کا کوئی اختیار نہیں، احتساب عدالت نے نصرت شہباز کے ٹرائل میں شامل ہونے کی رضامندی کو بھی پذیرائی نہیں دی، نصرت شہباز جان بوجھ کر ٹرائل سے غیر حاضر نہیں بلکہ وہ بیماری کی وجہ بیرون ملک ہیں، عدالت سے استدعاہے کہ احتساب عدالت کا نصرت شہباز کی حاضری سے استثنی کی درخواست خارج کرنے کا حکم کالعدم کیا جائے، درخواست میں یہ استدعا بھی کی گئی ہے کہ ملزمہ نصرت شہباز کی عدم پیشی نصرت شہباز کیخلاف پر جاری کارروائی بھی کالعدم کی جائے اوربیماری کی بنیاد پر نصرت شہباز کو حاضری سے استثنی دیا جائے۔ 
نصرت شہباز 

مزید :

صفحہ آخر -