پاکستان کی ترقی کیلئے کاروباری طبقہ کو مراعات دی جائیں،راجہ انور

پاکستان کی ترقی کیلئے کاروباری طبقہ کو مراعات دی جائیں،راجہ انور

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 
لاہور(پ ر) پاکستان کو دنیا کے معاشی نقشے پر لانے کیلئے ضروری ہے کہ کاروباری طبقے کو مراعات دی جائیں، ایز آف ڈوئنگ بزنس کو مد نظر رکھتے ہوئے پالیسیز تشکیل دی جائیں، مگر حکومت کی جانب سے کئے گئے حالیہ فیصلوں نے عوام اور کاروباری شعبے کو بری طرح متاثر کیا ہے، یہ کہنا تھا نائب صدر فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری (ایف پی سی سی آئی) راجہ محمد انور کا۔ جہاں کورونا کی وجہ سے معیشت پہلے ہی بحران کا شکار رہ چکی ہے وہاں بزنس سیکٹر پالیسی میکنگ میں کسی بھی قسم کی ناکامی کا متحمل نہیں ہوسکتا۔ نیپرا کی جانب سے بجلی کے بلوں میں اضافے کی منظوری عوام اور کاروباری طبقے کیلئے معاشی قیامت سے کم نہیں۔ لوگوں کی قوت خرید بھی طرح متاثر ہورہی ہے اور صنعتوں کیلئے مینوفیکچرنگ کی لاگت میں اعتدال لانا نا ممکن ہو رہا ہے۔


ان کا مزید کہنا تھا کہ اگر بھارت میں صنعتی شعبے کو کم قیمت پر بجلی ملے گی تو پاکستان مہنگی بجلی سے سستی مینیوفیکچرنگ کیسے کرسکتا ہے؟ حکومت کو چاہئیے کہ نہ صرف ٹیرف میں کمی لائی جائے بلکہ ان کو اس حد تک نیچے لایا جائے کہ بین الاقوامی سطح پر پاکستانی مصنوعات کو کمپیٹیٹیو مارکٹ میں فروخت کیا جاسکے۔ اگر اس طرح ہی چلتا رہا تو نہ صرف ایکسپورٹس متاثر ہونگی بلکہ لوکل مارکیٹ بھی مندی کا شکار رہے گی۔