فیصل آباد سمیت دیگر بڑے شہروں میں صنعتوں بارے مزید    ٹیسٹنگ لیبارٹریز قائم کرنا ہوں گی،صدر فیصل آباد چیمبر

  فیصل آباد سمیت دیگر بڑے شہروں میں صنعتوں بارے مزید    ٹیسٹنگ لیبارٹریز ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


فیصل آباد۔24فروری(اے پی پی):فیصل آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر انجینئرحافظ احتشام جاوید نے کہا  ہے کہ بین الاقوامی معیار کے مطابق فارما سیوٹیکل، انجینئرنگ، حلال فوڈ،لیدراور چاول ودیگر صنعتوں کی برآمدی ضروریات کو پورا کرنے کے قابل بنانے کیلئے فیصل آباد سمیت دیگر بڑے شہروں میں سٹیٹ آف دی آرٹ ٹیسٹنگ لیبارٹریز قائم اورپہلے سے قائم ٹیسٹنگ لیبارٹریز کو اپ گریڈکرنا ہوگاجبکہ ایکسپورٹ ڈویلپمنٹ فنڈ کے ذریعے انڈسٹریل سیکٹر کو استحکام دینے کیلئے ٹیسٹنگ لیبز اور سرٹیفکیشن کی سہولیات بھی مزید بہتر بنانا ہوں گی۔ایک ملاقات کے دوران انہوں نے کہا کہ حکومت کو مقامی طور پر تیار نہ ہونیوالے خام مال پر ریگولیٹری ڈیوٹی اور اضافی کسٹم ڈیوٹی ختم کرنے کی تجویزپر بھی غور کرنا ہوگا تاکہ ان سے پیدا ہونیوالی مصنوعات کی پیداواری لاگت میں کمی لانا ممکن ہوسکے۔انہوں نے کہا کہ فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری کوملک بھر کے تمام چیمبرز کے ساتھ مل کر انجینئرنگ، فارما اور دیگر برآمدی شعبوں کیلئے یکساں سہولیات کی فراہمی کیلئے کام کرنا چاہیے کیونکہ اس سے پاکستان کی برآمدات بڑھانے اور تجارتی خسارہ کم کرنے میں مدد ملے گی۔انہوں نے تجویز پیش کی کہ اگر لاہور، کراچی، راولپنڈی اسلام آباد سمیت تمام چیمبرز اور ایف پی سی سی آئی مشترکہ طور پر ورچوئل انٹرنیشنل کانفرنسز منعقد کریں تو وہ تجارت و سرمایہ کاری کے فروغ میں بہت معاون ثابت ہوسکتی ہیں۔انہوں نے کہا کہ جہاں دیگر ممالک کے فیڈریشن آف چیمبرز کے ساتھ نیٹ ورکنگ میں بہتری بہت اچھے نتائج کی حامل ہوگی وہیں پاکستانی مصنوعات کیلئے نئی منڈیوں کی تلاش میں بھی مدد ملے گی۔انہوں نے کہا کہ حکومت کوئی بھی پالیسی بنانے سے قبل اگر سٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں لے اور ان سے مشاورت کرلے تو اس کے بہتر نتائج حاصل ہوسکتے ہیں۔انہوں نے امید ظاہر کی  کہ حکومت مقامی انڈسٹری اور برآمد کنندگان کوایک ہی طرح کی سہولیات فراہم کرے گی نیزماحولیاتی تبدیلیوں کی وجہ سے مستقبل میں صنعتوں کو در پیش آنیوالے مسائل سے نمٹنے کیلئے بھی ابھی سے منصوبہ بندی کو یقینی بنایا جا ئے گا۔

مزید :

کامرس -