سرائیکی شاعر شاکر مہروی کی کل 11 ویں  برسی‘ سنانواں میں تقریب کا اہتمام

سرائیکی شاعر شاکر مہروی کی کل 11 ویں  برسی‘ سنانواں میں تقریب کا اہتمام

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


  کوٹ ادو (تحصیل رپورٹر)پاکستان کے معروف سرائیکی شاعر شاکر مہروی کی11 ویں برسی کل منائی جائے گی،شاکرمہروی 26 فروری 2010 کو اپنے خالق حقیقی سے (بقیہ نمبر55صفحہ 7پر)
جا ملے تھے، تفصیل کے مطابق ضلع مظفرگڑھ کے شہر سنانواں سے تعلق رکھنے والے سرائیکی وسیب کے معروف شاعر شاکرمہروی کی11ویں برسی کل منائی جارہی ہے انکے سرئیکی ادب دو مجموعات ہیں ”میں یاد آساں“ اور دوسرا مجموعہ ”بس توں“جبکہ تیس سے زائد کتابے بھی انکے مجموعات میں شامل ہیں،شاکر مہروی کو سرائیکی مشاعروں میں پذیراء حاصل تھی انکی مشہور زمانہ غزل”زندگی ہے سفر مختصر مختصر“ کو لوگوں میں خوب پسند کیا گئے جبکہ انکے بے شمار ڈوھڑے نظمیں اور غزلیات لوگوں میں بہت مقبول ہیں، شاکر مہروی کا شمار سرائیکی شعراء میں اساتذہ کرام میں ہوتا ہے،شاکرمہروی نے اپنے سوگواران میں ایک بیوی آٹھ بیٹاں اور ایک بیٹے کو چھوڑا،شاکر مہروی بیٹے عمران شاکرمہروی کا کہنا ہے کہ بہت جلد انکے آبائی شہر سنانواں میں ایک عظیم الشان سرائیکی مشاعرہ بیاد شاکرمہروی کا انعقاد کیا جائے گا،جس میں پاکستان بھر سے معروف شعراء کرام شرکت کریں گے، واضع رہے شاکرمہروی 26 فروری 2010 بروز جمعہ کو اپنے خالق حقیقی سے جا ملے انکا مزار سنانواں کے ساتھ انکے آباء گاؤں دربار پیر نبی شاہ پر واقع ہے جہاں انکے مداح فاتحہ خوانی کرنے آتے ہیں جبکہ برسی کے سلسلے میں تقریب کا اہتمام کیا گیا ہے۔
اہتمام