اسلام آباد ہائی کورٹ کا وفاقی حکومت کو 30روز میں جوڈیشل کمپلیکس کی تعمیر کا حکم 

اسلام آباد ہائی کورٹ کا وفاقی حکومت کو 30روز میں جوڈیشل کمپلیکس کی تعمیر کا ...
اسلام آباد ہائی کورٹ کا وفاقی حکومت کو 30روز میں جوڈیشل کمپلیکس کی تعمیر کا حکم 

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)اسلام آباد ہائی کورٹ نے وفاقی حکومت کو 30روز میں جوڈیشل کمپلیکس کی تعمیر کا حکم دے دیا،عدالت نے وزارت داخلہ، قانون اور منصوبہ بندی سیکرٹریز کی کمیٹی بنانے کا حکم دے دیا۔

نجی ٹی وی ہم نیوز کے مطاقب چیف جسٹس اطہر من اللہ نے کہاکہ ایگزیکٹو کے کام میں مداخلت نہیں کرنا چاہتے، بنیادی حقوق سلب نہیں ہونے دیں گے،ضلع کچہری کی صورتحال، سائلین کے بنیادی حقوق کا مقدمہ ہے ۔

عدالت نے کہاکہ وکلا کمپلیکس کی تعمیر کیلئے بھی ہونے والی پیش رفت سے متعلق بھی آگاہ کیا جائے، عدالت نے حکم دیا کہ خصوصی عدالتوں کے ملازمین کے انتظامی کنٹرول پر بھی آگاہ کریں ، خصوصی عدالتوں کے جج آرڈر لکھواتے ہیں، ملازمین کہتے ہیں ہم چائے پینے جا رہے ہیں ۔

چیف جسٹس اطہر من اللہ نے کہاکہ وزیراعظم پر اعتماد ہے کہ سائلین کا مسئلہ حل کریں گے ،سیکرٹری قانون نے کہاکہ جوڈیشل کمپلیکس کا پی سی ون آج منظور ہو جائے گا،چیف جسٹس ہائیکورٹ نے کہاکہ بیوروکریٹک مسائل میں نہ الجھائیں ، 30روز میں کام شروع ہونا چاہئے۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -