کرم ایجنسی اورڈسکہ میں دھاندلی قابل قبول نہیں،الیکشن کمیشن کواپنا فیصلہ سناناچاہئے،مولانا فضل الرحمان

کرم ایجنسی اورڈسکہ میں دھاندلی قابل قبول نہیں،الیکشن کمیشن کواپنا فیصلہ ...
کرم ایجنسی اورڈسکہ میں دھاندلی قابل قبول نہیں،الیکشن کمیشن کواپنا فیصلہ سناناچاہئے،مولانا فضل الرحمان

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

پشاور(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہاکہ کرم ایجنسی اورڈسکہ میں دھاندلی قابل قبول نہیں،الیکشن کمیشن نے ضمنی انتخاب کے نتائج روکے ہوئے ہیں،الیکشن کمیشن کواپنا فیصلہ سناناچاہئے۔
پشاور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان نے کہاکہ کرم ایجنسی کے ضمنی انتخاب میں 6 جعلی ووٹ پکڑے گئے،ضمنی انتخابات میں موقع پرموجودافسران دھاندلی میں ملوث ہیں،ضمنی الیکشن کے نتائج کومستردکرتے ہیں ، حلقوں میں نتائج تبدیل کیے گئے، نااہل امیدوارکوجتوایا گیا، پی ڈی ایم سربراہ نے کہاکہ دھاندلی دھاندلی ہے جس سطح پر بھی ہو،الیکشن کمیشن دوبارہ انتخاب کرائے، انہوں نے کہاکہ سینیٹ الیکشن میں کامیاب ہوں گے،یہی سرپرائزہے۔پی ڈی ایم سربراہی نے کہاکہ ججز کے ریمارکس میں آئین سے متعلق کہاگیاکہ آئین خاموش ہے،عدالت کوخود کوفریق نہیں بنانا چاہئے۔
مولانا فضل الرحمان نے کہاکہ قبائلی اضلاع میں لوگ مشکلات کی زندگی گزاررہے ہیں، فاٹا انضمام کے بعد وہاں کوئی نیا قانون ہے نہ پرانا ۔