’ڈسکہ کے عوام ڈنڈے اور گولیاں کھاکر بھی ووٹ ڈالنے نکلے‘ این اے 75 سے لیگی امیدوار نوشین افتخار بھی میدان میں آگئیں

’ڈسکہ کے عوام ڈنڈے اور گولیاں کھاکر بھی ووٹ ڈالنے نکلے‘ این اے 75 سے لیگی ...
’ڈسکہ کے عوام ڈنڈے اور گولیاں کھاکر بھی ووٹ ڈالنے نکلے‘ این اے 75 سے لیگی امیدوار نوشین افتخار بھی میدان میں آگئیں

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) این اے 75 کا انتخاب کالعدم قرار دینے کے الیکشن کمیشن کے فیصلے پر مسلم لیگ ن کی امیدوار نوشین افتخار کا کہنا ہے کہ اس فیصلے پر ڈسکہ کے عوام مبارکباد کے مستحق ہیں۔

الیکشن کمیشن کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے نوشین افتخار نے کہا کہ رب کی شکرگزار ہوں کہ اس نے ہمیں سرخرو کیا، آج کا فیصلہ تاریخی ہے جس سے ایک مثال قائم ہوئی ہے۔ اس فیصلے پر  این اے 75 کے عوام مبارکباد کے مستحق ہیں کیونکہ انہیں اپنا آئینی اور جمہوری حق ملا ہے۔

انہوں نے کہا کہ وہ میڈیا کی شکر گزار ہیں کیونکہ اس نے پوری انتخابی مہم اور بعد تک حق اور سچ کی لڑائی میں ہمارا ساتھ دیا۔ وہ اپنی پارٹی لیڈر شپ  کی بھی شکر گزار ہیں جنہوں نے ان پر اعتماد کیا۔ ڈنڈے اور گولیاں کھانے کے باوجود ڈسکہ کے عوام باہر نکلے جس پر وہ مبارکباد کے مستحق ہیں۔

خیال رہے کہ این اے 75 کے ضمنی الیکشن میں امن و امان کی صورتحال سمیت پریزائڈنگ افسران کے غائب ہونے کے معاملے پر الیکشن کمیشن آف پاکستان نے اسے کالعدم قرار دے دیا ہے۔ الیکشن کمیشن نے این اے 75 پر 18 مارچ کو دوبارہ پولنگ کا حکم دیا  ہے۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -