محمد حفیظ کی بورڈ کیساتھ پھر ٹھن گئی، سینٹرل کنٹریکٹ ٹھکرا دیا مگر کیوں؟ پریشان کن خبر آ گئی

محمد حفیظ کی بورڈ کیساتھ پھر ٹھن گئی، سینٹرل کنٹریکٹ ٹھکرا دیا مگر کیوں؟ ...
محمد حفیظ کی بورڈ کیساتھ پھر ٹھن گئی، سینٹرل کنٹریکٹ ٹھکرا دیا مگر کیوں؟ پریشان کن خبر آ گئی
سورس:   Twitter

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کرکٹ ٹیم کے سینئر آل راﺅنڈر محمد حفیظ نے سینٹرل کنٹریکٹ کی سی کیٹیگری ٹھکرا دی ہے جبکہ محمد رضوان اور فواد عالم کو عمدہ کارکردگی کا صلہ مل گیا ہے، محمد رضوان کو بی کیٹیگری سے ترقی دے کر اے میں شامل کر لیا گیا ہے جبکہ فواد عالم کو ڈومیسٹک کرکٹ کی اے پلس کیٹیگری سے ترقی دے کر سینٹرل کنٹریکٹ کی سی کیٹیگری دیدی گئی ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق مسلسل عمدہ کارکردگی کے باوجود پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) محمد حفیظ کی خدمات کو تسلیم کرنے پر آمادہ نظر نہیں آتا جنہیں قرنطینہ کے معاملے پر جنوبی افریقہ کیخلاف سیریز سے نظرانداز کیا گیا اور اس سے قبل ایوارڈ بھی نہیں دیا اور اب سی کیٹیگری کا سینٹرل کنٹریکٹ پیش کر کے انہیں مزید مایوس کر دیا گیا ہے۔ رواں سیزن میں عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کرنے پر محمد رضوان کو سینٹرل کنٹریکٹ کی بی کیٹیگری سے ترقی دے کر اے میں شامل کرلیا گیا جہاں بابراعظم، اظہر علی اور شاہین شاہ آفریدی پہلے ہی موجود ہیں۔

محمد رضوان رواں سیزن ٹیسٹ کرکٹ میں پاکستان کی جانب سے سب سے زیادہ رنز بنانے والے بلے باز ہیں جنہوں نے 7 میچز میں 52.90کی اوسط سے 529 رنز بنائے، ٹی 20 میں 65 کی اوسط کیساتھ 325 رنز بناکروہ تیسرے نمبر پر ہیں، رضوان نے ٹیسٹ کرکٹ میں وکٹوں کے پیچھے 16، ٹی 20 میں 8 اور ون ڈے میں 3 شکار کئے۔ دوسری جانب فواد عالم کو ڈومیسٹک کرکٹ کی اے پلس کیٹیگری سے ترقی دے کر سینٹرل کنٹریکٹ کی سی کٹیگری میں شامل کیا گیا ہے، انہوں نے حال ہی میں نیوزی لینڈ اور جنوبی افریقہ کے خلاف ٹیسٹ سیریز میں 2 سنچریاں بنائیں۔

دریں اثنا پی سی بی کے چیف ایگزیکٹیو وسیم خان کا کہنا ہے کہ ہم نے ٹی 20سپیشلسٹ محمد حفیظ کو بھی سینٹرل کنٹریکٹ سی کیٹیگری کی پیشکش کی تھی مگر انہوں نے اسے قبول کرنے سے معذرت کرلی،ہمیں ان کے فیصلے پرمایوسی ضرور ہوئی مگراس کا احترام کرتے ہیں،حفیظ نئے سیزن کا انتظار کرنا چاہتے ہیں، ہم سینٹرل کنٹریکٹ میں ترقی پانے پر محمد رضوان اور فواد عالم کو مبارکباد پیش کرتے ہیں،یہ فیصلہ سلیکشن کمیٹی کے سربراہ محمد وسیم سے ملاقات میں کھلاڑیوں کی کارکردگی کا تفصیلی جائزہ لینے کے بعد کیا، کھلاڑیوں کو دوران سیزن ترقی ملنے سے دیگر کو مثبت پیغام ملے گا۔

مزید :

کھیل -