ڈسکہ انتخاب، الیکشن کمیشن نے پاکستان کی تاریخ کا سب سے بڑا فیصلہ سنادیا، ڈپٹی کمشنر سمیت مبینہ دھاندلی کرنے والے تمام افسروں کو معطل کردیا

ڈسکہ انتخاب، الیکشن کمیشن نے پاکستان کی تاریخ کا سب سے بڑا فیصلہ سنادیا، ...
ڈسکہ انتخاب، الیکشن کمیشن نے پاکستان کی تاریخ کا سب سے بڑا فیصلہ سنادیا، ڈپٹی کمشنر سمیت مبینہ دھاندلی کرنے والے تمام افسروں کو معطل کردیا
سورس:   ٖFile

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) این اے 75 ڈسکہ ضمنی انتخابات  میں ہونے والی مبینہ دھاندلی کی شکایت پر الیکشن کمیشن نے کارروائی کرتے ہوئے کمشنر گوجرانوالہ اور آرپی او گوجرانوالہ کو عہدوں سے تبدیل کرکے گوجرانوالہ ڈویژن سے باہر بھیجنے کی ہدایت کردی ۔ 

الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق این اے 75ضمنی الیکشن میں ہونے والی مبینہ دھاندلی کی شکایت پرچیف سیکرٹری پنجاب اور آئی جی پنجاب کو ضمنی انتخابات کے دران اپنے فرائض سے غفلت برتنے پر 4 مارچ 2021 کو ذاتی حیثیت میں طلب کر لیا ہے۔ الیکشن کمیشن نے کمشنر گوجرانوالہ ڈویژن اور آرپی او گوجرانوالہ رینج کو ان کے موجود عہدوں سے تبدیل کر کے گوجرانوالہ ڈویژن  سے باہر بھیجنے کی ہدایت کی ہے۔ الیکشن کمیشن نے سٹیبلشمنٹ ڈویژن کو حکم دیا ہے کہ ڈپٹی کمشنر سیالکوٹ، ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر سیالکوٹ اور اسسٹنٹ کمشنر ڈسکہ کو معطل کیا جائے ۔ 

اعلامیے کے مطابق الیکشن کمیشن نے وفاقی حکومت اور حکومت پنجاب کو بھی یہ حکم دیا ہے کہ ذیشان جاوید لاشاری ڈپٹی کمشنر سیالکوٹ ، حسن اسدعلوی ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر سیالکوٹ ، آصف حسین اسسٹنٹ کمشنر ڈسکہ، ذوالفقار ورک ڈی ایس پی سمبڑیال اور محمد رمضان کمبوہ ڈی ایس پی ڈسکہ  کو معطل کیا جائےاور ان کو آئندہ کے لیے کسی الیکشن ڈیوٹی پر مامور نہ کیا جائے۔ مذکورہ بالا تمام افسران کے خلاف الیکشن کمیشن خود انکوائری کرے گا یا وفاقی حکومت یا صوبائی حکومت کو انکوائری کرانے کا حکم دے گا جس کا فیصلہ بعد میں ہوگا۔  

خیال رہے کہ این اے 75 کے ضمنی الیکشن میں امن و امان کی صورتحال سمیت پریزائڈنگ افسران کے غائب ہونے کے معاملے پر الیکشن کمیشن آف پاکستان نے اسے کالعدم قرار دے دیا ہے۔ الیکشن کمیشن نے این اے 75 پر 18 مارچ کو دوبارہ پولنگ کا حکم دیا ہے۔   

مزید :

اہم خبریں -قومی -