’وہ کم عمری میں اپنے بوائے فرینڈ کے ساتھ گھر سے بھاگ گئی، شہر پہنچی تو اس کے عاشق نے جسم فروشی پر مجبور کردیا‘

’وہ کم عمری میں اپنے بوائے فرینڈ کے ساتھ گھر سے بھاگ گئی، شہر پہنچی تو اس کے ...
’وہ کم عمری میں اپنے بوائے فرینڈ کے ساتھ گھر سے بھاگ گئی، شہر پہنچی تو اس کے عاشق نے جسم فروشی پر مجبور کردیا‘

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ممبئی(مانیٹرنگ ڈیسک) بالی ووڈ اداکارہ عالیہ بھٹ سنجے لیلا بھنسالی کی آئندہ فلم ’گنگوبائی کاٹھیاواڑی‘ میں مرکزی کردار ادا کر رہی ہیں، جس کی کہانی 60ءکی دہائی کی ایک جسم فروش عورت کی زندگی پر لکھی گئی ہے جسے اس کے بوائے فرینڈ نے گھر سے بھگا کر جسم فروشی پر مجبور کر دیا تھا۔ کہا جاتا ہے کہ گنگوبائی گجرات کے علاقے کاٹھیاواڑ کی ایک باعزت وکلاءفیملی سے تعلق رکھتی تھی۔ وہ کم عمری میں ہی اپنے بوائے فرینڈ کے ساتھ گھر سے بھاگ گئی۔ اس کا بوائے فرینڈ اس کے باپ کا جاننے والا تھا۔ وہ اسے گھر سے بھگا کر ممبئی لے گیا اور وہاں اسے کماتھی پورا میں واقع ایک قحبہ خانے میں جسم فروشی کے دھندے پر لگا دیا۔
گنگوبائی کو اداکاری کا شوق تھا اور وہ خود کو بڑی سکرین کے پردے پر دیکھنا چاہتی تھی لیکن اسے جسم فروشی کی دلدل میں دھکیل دیا گیا۔ جس کے بعد وہ ممبئی کی ’مافیا کوئین‘ بن کر سامنے آئی۔ اس نے چند سال انتہائی کسمپرسی کے گزارے اور پھر ممبئی انڈرورلڈ کے ساتھ اس کے روابط قائم ہوئے اور وہ بہت طاقتور خاتون کے طور پر سامنے آئی۔اسے انڈرورلڈ ڈان کریم لالہ نے اپنی ’راکھی بہن‘ بنا لیا تھا، وہیں سے اس کی زندگی نے ایک نیا موڑ لیا۔اس کے بعدوہ شہر کے ’ریڈ لائٹ ڈسٹرکٹ‘ میں کئی قحبہ خانوں کی مالک بنی۔جس کے نتیجے میں اسے ’میڈم آف کماتھی پورا‘ کا خطاب ملا۔ اس کے پاس اس قدر پیسہ آ گیا تھا کہ وہ سیاہ رنگ کی بینٹلے میں گھومتی تھی۔ اس کے علاوہ بھی اس کے پاس کئی لگژری کاریں تھی۔ یہی نہیں بلکہ وہ اپنی ساڑھیوں پر سونے کے بارڈر اور بلاﺅز میں سونے کے بٹن لگوانے کے حوالے سے بھی شہرت رکھتی ہے۔ اس نے جسم فروش خواتین کے مسائل پر گفتگو کرنے کے لیے اس وقت کے وزیراعظم پنڈت جواہر لعل نہرو کے ساتھ ملاقات بھی کی تھی۔اس کی زندگی پر بنائی جانے والی یہ فلم 30جولائی کو ریلیز ہوگی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -