آسٹریا میں یونیورسٹیوں میں تعلیمی مواقع اور پوسٹ اکیڈمک کیریئر ڈویلپمنٹ کے بارے میں ویبینار

آسٹریا میں یونیورسٹیوں میں تعلیمی مواقع اور پوسٹ اکیڈمک کیریئر ڈویلپمنٹ کے ...
آسٹریا میں یونیورسٹیوں میں تعلیمی مواقع اور پوسٹ اکیڈمک کیریئر ڈویلپمنٹ کے بارے میں ویبینار

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ویانا(المیر باجوہ) آسٹریا میں پاکستان کے سفارتخانے نے کامسٹس یونیورسٹی اسلام آباد اور آسٹریا میں پاکستانی پیشہ ور افراد کے تعاون سے آسٹریا کی یونیورسٹیوں میں تعلیمی مواقع اور تعلیم کے بعد کیریئر کی ترقی کے بارے میں ایک ویبنار کا اہتمام کیا۔ اس میں COMSATS کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر ، ڈاکٹر ایس ایم ، جنید زیدی ، COMSATS یونیورسٹی اسلام آباد کے طلبااور فیکلٹی ممبران نے شرکت کی۔
 سفیر پاکستان ویانا آسٹریا آفتاب احمد کھوکھر نے اس پروگرام کے انعقاد کے لئے تعاون کرنے پر آسٹریا میں COMSATS یونیورسٹی اور پاکستانی پیشہ ور افراد کا شکریہ ادا کیا۔انہوں نے کہا کہ تعلیم دو ممالک کو آپس میں جوڑنے اور ان کے باہمی تعاون کو مضبوط بنانے کے لئے بہت اہم شعبہ ہے۔پاکستانی طلباجو ملک کا مستقبل ہیں آسٹریا میں اپنے مثبت طرز عمل اور علمی فضیلت کے ذریعہ پاکستان کے نرم امیج کو فروغ دے سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سفارت خانہ خواہشمند پاکستانی طلبا کو ہر ممکن سہولت فراہم کرے گا۔
 پاکستانی پیشہ ور خرم افتخار نے آسٹریا کی یونیورسٹیوں میں داخلے کے عمل چیلنجوں اور آسٹریا میں تعلیم حاصل کرنے کے لئے آگے جانے والے طریقوں کے بارے میں طالب علموں کو آگاہ کیا۔مسٹر فیصل مسعود نے آسٹریا یونیورسٹیوں میں درخواستوں پر آسانی سے عمل درآمد اور تعلیمی بعد کی کیریئر کی ترقی کے لئے مفید اقدامات کے بارے میں اپنے تجربے کو بتایا۔ مسٹر واصف مسعود نے خواہشمند طلبہ کے ساتھ جدید ترین تکنیکی رجحانات پر روشنی ڈالی جبکہ مسٹر منتظیر عباس نے COMSATS سے آسٹریا کی یونیورسٹی کے سفر کے دوران اپنے ذاتی تجربات بھی شیئر کیے۔انہوں نے طلباءکو آسانی سے داخلہ حاصل کرنے اور بغیر کسی ویزا ایجنٹوں کی مدد کے یونیورسٹیوں میں داخلے کے لئے رہنمائی کی تاکہ ان کے استحصال سے بچ سکیں۔ویبنار کے انعقاد کے لئے پاکستانی سفارتخانے کا شکریہ ادا کرتے ہوئے ڈاکٹر ایس ایم جنید زیدی نے غیر ملکی یونیورسٹیوں کے ساتھ تعلیم اور تعاون کی اہمیت پر زور دیا۔ انہوں نے کہا کہ ویبنار COMSATS کے طلباءکی رہنمائی کے لئے بہت کارآمد تھا۔لہذا انہوں نے طلبہ کی سہولت کے لیے اس طرح کی مصروفیت کو جاری رکھنے کی تجویز پیش کی۔
 سفیر آفتاب کھوکھر نے اپنے اختتامی کلمات میں کہا کہ سفارتخانہ ویانا تعلیم کے شعبے میں آسٹریا کے ساتھ تعاون کو فروغ دینے کے لئے اس طرح کے ویبنرز کا سلسلہ جاری رکھے گا کیونکہ اس سے پاکستان کے انسانی وسائل کی ترقی اور آسٹریا کے ساتھ تعلقات کو مزید فروغ ملے گا۔