عارف علوی نے بطور صدر مملکت اپنے عہدے سے انصاف نہیں کیا،عطاء تارڑ 

عارف علوی نے بطور صدر مملکت اپنے عہدے سے انصاف نہیں کیا،عطاء تارڑ 
عارف علوی نے بطور صدر مملکت اپنے عہدے سے انصاف نہیں کیا،عطاء تارڑ 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) رہنما (ن) لیگ عطاءتارڑ نے کہا ہے کہ عارف علوی نے بطور صدر مملکت اپنے عہدے سے انصاف نہیں کیا,وہ اجلاس بلانے کے حوالے سے تاحال کوئی فیصلہ نہیں کر سکے۔

لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ صدر پاکستان اسمبلی کا اجلاس بلانے میں تاخیر کر رہے ہیں،آئین میں درج ہے کہ 21 روز کے اندر اسمبلی کا اجلاس بلایا جائے،قومی اسمبلی اراکین کے نوٹیفکیشن ہو چکے ہیں،ایوان صدر اس وقت سازشوں کا گڑھ بنا ہوا ہے۔

انہوں نے الزام عائد کیا کہ ایوان صدر میں رہ کر عارف علوی کے بیٹے نے بیرون ممالک کمپنیوں کے ساتھ 700کروڑ  روپےکے ایم او یو سائن کیے،کیا بطور صدر آپ کو یہ زیب دیتا ہے کہ آپ ایوان صدر کو اپنے بیٹے کے کاروبار کے لئے استعمال کریں،عارف علوی بطور صدر بھارتی نژاد امریکیوں کے ساتھ اپنے بیٹے کے ساتھ ایم او یو تقریب میں شریک تھے،آپ خود 700کروڑ کی کرپشن کریں اور جمہوریت کو ڈی ریل کریں ایسا نہیں ہوسکتا،صدر عارف علوی نے 4 کروڑ 36 لاکھ کے اثاثے ظاہر کررکھے ہیں جو حقیقت نہیں۔

عطاءتارڑ نے مزید کہا کہ عارف علوی بطور صدر ایک سیاسی کارکن بن کر کام کرتے رہے،آئی ایم ایف کو خط لکھنا ہو تو اس کے تانے بانے بھی ایوان صدر سے ملتے ہیں،جیلوں میں جا کر مجرموں سے ملاقات ہو یا بیٹے کے کاروبار کو پروان چڑھنا ہو اس کے تانے بانے ایوان صدر سے ملتے ہیں،قومی اسمبلی کا اجلاس 29 فروری کو ہو کر رہے گا مگر صدر عارف علوی کا کردار تاریخ میں یاد رکھا جائے گا،صدر عارف علوی کی کرپشن پر تحقیقات کیلئےقومی اسمبلی میں آواز اٹھاؤنگا۔

مزید :

قومی -