6ماہ میں ٹیکسٹائل برآمدات کاحجم 6.94ارب ڈالر تک پہنچ گیا

6ماہ میں ٹیکسٹائل برآمدات کاحجم 6.94ارب ڈالر تک پہنچ گیا

  

کراچی (اکنامک رپورٹر )پاکستان ٹیکسٹائل ایکسپورٹرز ایسوسی ایشن کے مطابق رواں مالی سال کے 6ماہ کے دوران ٹیکسٹائل برآمدات کاحجم 8.36فیصد اضافہ کے ساتھ 6.94ارب ڈالر تک پہنچ گیاہے جبکہ مجموعی برآمدات میں 5.11 فیصد ، بیڈویئر میں 21.72فیصد ، نٹ ویئر میں 5.35 فیصد ، میڈاپس میں 18.09 فیصد ، ریڈی میڈ گارمنٹس میں 7.92فیصد ، کاٹن کلاتھ میں 6.1فیصد اضافہ مگر کاٹن یارن کی برآمدات میں 3.10 فیصد کمی واقع ہوگئی ہے۔چیئرمین شیخ الیاس محمودنے کہا کہ سال 2012ءکے مقابلہ میں سال 2013ءکے دوران ٹیکسٹائل برآمدات میں 214ملین ڈالرسے زائدکا اضافہ ہواہے لہٰذا اگر یہی صورتحال برقرار رہی اور توانائی کے بحران پر قابو پانے سمیت صنعتی اداروں کو گیس وبجلی کی سپلائی جاری رکھی گئی تو بہت جلد برآمدی اہداف کا حصول یقینی بنالیاجائیگا۔ انہوںنے کہاکہ ایکسپورٹرز کے اربو ں روپے کے ریفنڈ کلیمز کی ادائیگی نہ ہونے سے انہیں شدید مالی مشکلات کاسامنا ہے اس لئے انہیں ریفنڈ کلیمز کی جلد ادائیگی یقینی بنائی جائے۔ انہوںنے کہاکہ اگر برآمدکنندگان کو سہولیات کی فراہمی کاسلسلہ جاری رکھا گیا تو اگلے چارسالوں میں ٹیکسٹائل برآمدات دو گنا ہوجائیں گی۔

 انہوںنے کہاکہ حالیہ 6ماہ میں ٹیکسٹائل برآمدات کاحجم 6.94ارب ڈالر رہا جو گزشتہ سال میں 6.40 ارب ڈالر تھا اس طرح ٹیکسٹائل برآمدات کے حجم میں 8.36فیصد اضافے کے علاوہ مجموعی برآمدات میں 5.11 فیصد اضافہ ریکارڈ کیاگیا۔ انہوں نے کہاکہ ٹیکسٹائل انڈسٹری کے پاس اتنی استعداد ہے کہ وہ زیادہ پیداوار کے ذریعے برآمدات میں مزید اضافہ کر سکے۔انہوں نے امید ظاہر کی کہ یورپی ممالک کو ڈیوٹی فری برآمد کے اجراءکے باعث رواں مالی سال کے اگلے چھ ماہ میں ٹیکسٹائل برآمدات میں واضح اضافہ ہوگا۔

مزید :

کامرس -