منگلا ڈیم کے قرب و جوار میں قدرتی وسائل کے تحفظ پر تین روزہ ٹریننگ ورکشاپ

منگلا ڈیم کے قرب و جوار میں قدرتی وسائل کے تحفظ پر تین روزہ ٹریننگ ورکشاپ

  

لاہور (ایجوکیشن رپورٹر):پنجاب یونیورسٹی شعبہ زوآلوجی کے زیر اہتمام منگلا ڈیم کے قرب و جوار میں قدرتی وسائل کے تحفظ پر تین روزہ ٹریننگ ورکشاپ کا انعقاد میر پور آزاد کشمیر میں کیا گیا۔ ٹریننگ ورکشاپ میں یونیورسٹی کالج لندن سے ڈاکٹر ظہیر احمد ناصر، پنجاب یونیورسٹی شعبہ زوالوجی کے ایسوسی ایٹ پروفیسر ڈاکٹر ذوالفقار علی، پی ایچ ڈی سکالر بشریٰ ناصر خان اور ماہرین سمیت 94 خواتین اور 72 مرد شرکاءنے شرکت کی۔ ورکشاپ کا مقصد منگلا ڈیم کے گرد ماحول کا جائزہ لینے، مقامی افراد کی ماحول سے آگاہی اور ماحولیاتی تحفظ کو یقینی بنانے کے لئے اقدامات کا جائزہ تھا۔ ورکشاپ سفارشات پیش کی گئیں کہ منگلا ڈیم اور اس سے منسلک دریاو¾ں کی حفاظت کے لئے جنگلی حیاتیات اور ماحول کا مستقل بنیادوں پر تحفظ لازمی ہے۔ سفارشات میں کہا گیا ہے کہ ماحول کے تحفظ کو یقینی بنانے کے لئے درختوں کی کٹائی کا سدِ باب اور وسیع پیمانے پر شجرکاری کرنے کی ضرورت ہے۔ سفارشات میں زور دیا گیا ہے کہ ماحول اور وائلڈ لائف کو تحفظ فراہم کرنے کے لئے مقامی آبادی میں شعور اجاگر کرنے اور ان کی شمولیت لازمی ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -