آپریشن بھر پور اورکسی رعائت کے بغیر ہونا چاہیے،عسکری ماہرین

آپریشن بھر پور اورکسی رعائت کے بغیر ہونا چاہیے،عسکری ماہرین

  

لاہور(انوسٹی گیشن سیل) ملک میں دہشتگردی کے خاتمے کےلئے سیاسی قیادت کی یکجہتی اور عوام کا اعتماد ضروری ہے۔حکومت کا سنجیدگی سے قدم اٹھانا چاہیے،ایک آپریشن سے ملک میں امن قائم نہیں ہو سکتا۔آڈیننس دنیا بھر میں لائے جاتے ہیں،دہشتگردی کے خاتمے کےلئے اداروں کی مضبوطی ضروری ہے۔ان خیالات کا اظہار ملک کے عسکری ماہرین نے روز نامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ہے۔سابق سر براہ آئی ایس آئی پنجاب برگیڈئیر (ر)اسلم گھمن نے کہاکہ دہشتگردوں کے خلاف آپریشن بھر پور اورکسی رعائت کے بغیر ہونا چاہیے۔ آپریشن کےلئے سیاسی قیادت کا یکجا ہونا اور قوم کو اعتماد میں لینا ضروری ہے۔ہوم ورک میں کمی کی وجہ سے مذاکرات ناکام ہوئے ہیں۔تحفظ پاکستان ترمیمی آرڈیننس جیسے قوانین دنیا بھر میں لائے جاتے ہیں۔ایجنسیوں اور دیگر اداروں کے ہاتھ مضبوط کرنے سے دہشتگردی کے خاتمے میں مدد ملے گی۔ائیر مارشل (ر)شاہد ذولفقار نے کہاکہ دہشتگردی کا مسئلہ گھمبیر ہے جس کےلئے بنیادی اصلاحات لانے کی ضرورت ہے ،ایک آپریشن سے ملک میں امن قائم نہیں ہو گا۔جنرل(ر)نصیر اختر نے کہاکہ دہشتگردی کے خلاف حکومت نے عملی کام شروع کیا ہے ۔جس کے نتائج کچھ عرصہ بعد سامنے آئیں گے۔حکومت ملک میں قیام امن کےلئے کوششیں کر رہی ہے۔

عسکری ماہرین

مزید :

صفحہ آخر -