لیاقت جتوئی کی پیپلز پارٹی میں شمولیت کے معاملے پر پارٹی میں جھگڑا شروع

لیاقت جتوئی کی پیپلز پارٹی میں شمولیت کے معاملے پر پارٹی میں جھگڑا شروع

  

کراچی (خصوصی رپورٹ) لیاقت جتوئی کی پیپلز پارٹی میں شمولیت کے معاملے پر پارٹی میں جھگڑا شروع ہوگیا۔ پیر مظہرالحق کہتے ہیں کہ لیاقت جتوئی سے ذاتی رنجش ہے، پارٹی مفاد میں اعتراض نہیں کروں گا۔ پیپلز پارٹی کے رکنِ قومی اسمبلی عمران ظفر لغاری کا کہنا ہے کہ پارٹی میں لیاقت جتوئی کسی صورت قابل قبول نہیں۔ تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعلیٰ سندھ اور سابق وفاقی وزیرپانی وبجلی لیاقت جتوئی آئندہ ہفتے پیپلزپارٹی میں شمولیت کا اعلان کریں گے۔ لیاقت جتوئی کے خاندانی ذرائع نے ان کی پیپلزپارٹی میں شمولیت کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ لیاقت جتوئی اور پیپلزپارٹی کے تمام معاملات طے ہوچکے ہیں اور اب وہ پیپلزپارٹی کے شریک چیئرمین آ صف زرداری اور فریال تالپور سے ملا قات میں باقاعدہ پیپلزپارٹی میں شرکت کا اعلان کردیں گے۔ دادو سے پیپلز پارٹی کے اہم رہنما پیرمظہرالحق کا کہنا ہے کہ لیاقت جتوئی کے ساتھ ذاتی رنجش ہے تاہم پارٹی کے مفاد میں انہیں لیاقت جتوئی کے پیپلزپارٹی میں شمولیت پر اعتراض نہیں۔ پیرمظہرالحق نے کہا کہ آصف زرداری کا کہنا ہے کہ بہت لوگ جلد پیپلزپارٹی میں شامل ہوں گے اور ہم انہیں خوش آمدید کہیں گے اور جوبھی پیپلزپارٹی میں شمولیت کاارادہ رکھتا ہے اسے شامل کیاجائے۔ دادو سے ہی پیپلزپارٹی کے ایک اور اہم رہنما اور رکن قومی اسمبلی عمران ظفر لغاری نے دوٹوک الفاظ میں کہا ہے کہ لیاقت جتوئی کسی صورت پیپلزپارٹی میں قبول نہیں اور پیپلزپارٹی کے دروازے لیاقت جتوئی کے لیے بند ہیں۔ عمران ظفر لغاری نے کہا کہ لیاقت جتوئی پیپلزپارٹی میں شامل ہونے کے بہانے تلاش کر رہے ہیں۔

مزید :

صفحہ اول -