وہ انوکھی ترین خاتون جو15 سال سے بھوک ہڑتال پر ہے کیونکہ۔۔۔

وہ انوکھی ترین خاتون جو15 سال سے بھوک ہڑتال پر ہے کیونکہ۔۔۔
وہ انوکھی ترین خاتون جو15 سال سے بھوک ہڑتال پر ہے کیونکہ۔۔۔

  


نئی دلی (نیوز ڈیسک) بھارتی قوانین کی جارحانہ شقوں کے خلاف بھوک ہڑتال کرنے والی خاتون کو عدالتی حکم پر پولیس کی قید سے رہائی ملنے کے اگلے ہی روز پولیس نے پھر بھوک ہڑتال کرنے کے جرم میں دوبارہ گرفتار کر لیا ہے۔ لیس سالہ ارم شرمیلا نے 2000ءمیں اس وقت احتجاج کا آغاز کیا تھا جب افعال شہر میں آسام رائفلز کے اہلکاروں نے ایک جعلی مقابلے میں 10 دس شہریوں کو ہلاک کر دیا تھا۔ ارم نے ان اہلکاروں کو تحفظ دینے والے آرمڈ مورسز (سپیشل پاورز) ایکٹ کے خاتمے کیلئے بھوک ہڑتال تا مرگ کا آغاز کر دیا۔

سیلفی کا منفرد ترین استعمال کرتے ہوئے خاتون نے 50کلو وزن کر لیا

حکام نے اسے زبردستی ایک ہسپتال میں رکھا ہوا تھا جہاں انہیں زبردستی ناک کے ذریعے خوراک دی جاتی تھی۔ پولیس نے انہیں اقدام خودکشی کے الزام میں گرفتار کر لیا تھا مگر عدالت نے پولیس کے موقف کو رد کرتے ہوئے ان کی رہائی کا حکم دیا تھا۔ رہا ہوتے ہی ارم نے ظالمانہ قانون کے خلاف دوبارہ بھوک ہڑتال شروع کر دی اور پولیس نے تمام قوانین کو بالائے طاق رکھتے ہوئے دوسرے ہی روز انہیں پھر اسی الزام میں گرفتار کر لیا جسے عدالت ایک روز پہلے رد کر چکی تھی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس