FATFارکان کی پاکستانی کاوشوں کی تعریف، نام گرے لسٹ سے نکلنے کا قوی امکان

      FATFارکان کی پاکستانی کاوشوں کی تعریف، نام گرے لسٹ سے نکلنے کا قوی امکان

  



بیجنگ (مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں)پاکستان کا نام آئندہ ماہ فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) کی گرے لسٹ سے نکالے جانے کا قوی امکان ہے۔ایف اے ٹی ایف کے تکنیکی معاملات سے متعلق اجلاس چین میں ہوا جس میں رکن ممالک کے نمائندوں نے پاکستان کی کاوشوں کو سراہا۔ذرائع کے مطابق ایف اے ٹی ایف نے اکتوبر کے بعد پاکستان کی کوششوں کو تسلیم کیا ہے۔ذرائع نے بتایا کہ نمائندہ ممالک میں امریکا، جرمنی، جاپان، فرانس، آسٹریلیا، برطانیہ، بھارت، چین اور نیوزی لینڈ شامل ہیں جبکہ ذرائع نے بتایا کہ ایف اے ٹی ایف کی باضابطہ رپورٹ آئندہ چند دنوں میں دی جائے گی جس کے بعد فروری کے اجلاس میں پاکستان کے مستقبل کا فیصلہ ہوگا۔ دوسری جانب بھارتی میڈیا رپورٹس میں کہا گیا ہے کہ پاکستان کا نام آئندہ ماہ فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) کی گرے لسٹ سے نکالے جانے کا قوی امکان ہے۔بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق چین کی لابنگ اور نجی کنسلٹنٹ کی مدد سے 75 فیصد امکان ہے کہ پاکستان کا نام ایف اے ٹی ایف کی گرے لسٹ سے نکال دیا جائے۔رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ قوی امکان ہے کہ 16 فروری کو ہونے والے اہم اجلاس، جس میں تمام رکن ممالک شرکت کریں گے، پاکستان کا نام گرے لسٹ سے نکل جائے گا۔ رپورٹ کے مطابق بیجنگ میں ہونے والے اجلاس میں چین نے 39 ممالک کے گروپ کوبتایا کہ پاکستان انسداد دہشت گردی میں مؤثرکوششیں کررہا ہے، پاکستان کو گرے لسٹ سے نکلنے اور وائٹ لسٹ میں آنے کے لیے 39 ووٹوں میں سے 12 ووٹ درکار ہیں۔یاد رہے کہ فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کا 3 روزہ مذاکراتی اجلاس 21 جنوری سے 23 جنوری تک چین کے دارالحکومت بیجنگ میں ہوا جس میں پاکستانی وفد کی قیادت وفاقی وزیر برائے اقتصادی امور حماد اظہر نے کی۔

ایف اے ٹی ایف

مزید : صفحہ اول