پارلیمنٹ ہاؤس میں لگے فلٹر پلانٹس کا پانی مضر صحت قرار

  پارلیمنٹ ہاؤس میں لگے فلٹر پلانٹس کا پانی مضر صحت قرار

  



اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) پارلیمنٹ ہاس اور لاجز میں لگے فلٹر پلانٹس کا پانی مضر صحت قرار دے دیا گیا،مضر صحت پانی کا انکشاف پاکستان کونسل ریسرچ، واٹر ریسورسز کی رپورٹ میں ہوا،پارلیمنٹ ہاس اور لاجز کے پینے کے پانی کی ٹیسٹ رپورٹ جاری کی گئی ہے جس کے مطابق پارلیمنٹ ہاس کا پانی انسانی صحت کے لیے غیر محفوظ ہے،رپورٹ کے مطابق پی سی آر ڈبلیو آر نے 11 مختلف مقامات سے واٹر سیمپل جمع کیے، مائیکرو بائیولوجیکل اسٹینڈرڈ کے مطابق پانی کے لیبارٹری ٹیسٹ کیے گئے،پارلیمنٹ لاجز سے لیے گئے 4 نمونے مضر صحت قرار پائے جبکہ ٹیکنیکل ٹیم نے پارلیمنٹ کے 7 مختلف مقامات سے واٹر سیمپل لیے تھے۔پارلیمنٹ لاجز کے بلاک ایف، جی اور ایچ کا پانی بھی محفوظ نہیں،صرف پارلیمنٹ کے گراونڈ فلور پر لگے فلٹر کا پانی محفوظ قرار دیا گیا ہے،وزارت سائنس و ٹیکنالوجی کا ذیلی ادارہ ہے جو وقتا فوقتا پانی کا معیار چیک کرتا ہے۔

پارلیمنٹ ہاوس

مزید : صفحہ آخر