نئی کمپنیوں کوکوٹہ دینے سے قبل ہوپ سے کیا معاہدہ پورا کیا جائے: خرم ثقلین

    نئی کمپنیوں کوکوٹہ دینے سے قبل ہوپ سے کیا معاہدہ پورا کیا جائے: خرم ثقلین

  



لاہور (انٹرویو؛میاں اشفاق انجم)نومنتخب چیئرمین ہوپ پنجاب خرم ثقلین نے ”روزنامہ پاکستان“ سے خصوصی انٹرویو میں کہا ہے،نئی کمپنیوں کو کوٹہ دینے سے پہلے 2012.13 میں ہوپ سے کئے گئے معاہدے کے مطابق کاٹا گیا کوٹہ بحال کیا جائے اور 50کوٹہ والوں کا کوٹہ کم ازکم دوبسوں کا کیا جائے، حج پالیسی 2020کا فوری اعلان کیا جائے، سرکاری اور پرائیویٹ سکیم کا حج کرایہ یکساں رکھا جائے۔ پرائیویٹ سکیم کی بڑھتی ہوئی ڈیمانڈ کے پیش نظر سرکاری اور پرائیویٹ سکیم کے کوٹہ کی تقسیم ففٹی ففٹی کے حساب سے کی جائے۔ چیئرمین ہوپ نے پنجاب کے حج آرگنائزر کی طرف سے اپنے اوپر کئے گئے اعتماد پر اظہار تشکر کرتے ہوئے کہا میں اپنے قائد اور مرکزی چیئرمین شاہد رفیق کی رہنمائی میں ہوپ کا تشخص بحال کروں گا۔حج آرگنائزر کے حقوق کے تحفظ کیلئے کسی قربانی سے دریغ نہیں کروں گا، انہوں نے کہا میں حج آرگنائزر کے انفرادی اور اجتماعی مسائل کے حل کیلئے 24گھنٹے خدمت کروں گا۔ خرم ثقلین نے کہا حج 2012ء میں حکومت اور ہوپ کے درمیان معاہدہ ہوا تھا کہ 2013ء مین ہوپ قربانی دے۔سعودیہ سے جب بھی کوٹہ بحال ہوا ہوپ کا کاٹا گیا کوٹہ واپس کر دیں گے۔ گزشتہ 2سال سے کوٹہ بحال ہو گیا ہے حکومت معاہدے کے مطابق ہمارا کوٹہ بحال کرے انہوں نے کہا 50کوٹہ والوں کی مشکلات بہت زیادہ ہیں 2011ء میں کہا گیا تھا 50والے 3سال کا حج آپریشن مکمل کریں گے تو کوٹہ بڑھے گا 50والوں کا کوٹہ بڑھانا ضروری ہے۔ چیئرمین نے کہا وزارت مذہبی امورپرائیویٹ سکیم کیلئے سزا کیساتھ جزا کا نظام بھی قائم کرے۔ ہمیں غلطی پر سزا تو دی جاتی ہے مگر آج تک شاباس نہیں دی گئی۔حالانکہ دنیا بھر میں پاکستان کی پرائیویٹ سکیم سر فہرست ہے، اس نے ہر آنیوالے دن میں اپنے آپ کو بہتر کیا ہے۔ خرم ثقلین نے چیئرمین ہوپ شاہد رفیق کی طرف سے سرکاری حج سکیم کے عازمین کو تربیت دینے کی آفر کا خیر مقدم کیا اور کہا اس سے سرکاری حجاج کو بہتر رہنمائی اور تربیت ملے گی۔ وزارت حج کو اس سے فائدہ اٹھانا چاہے۔ انہوں نے وفاقی وزیر پیر نور الحق قادری اور وفاقی سیکرٹری میاں مشتاق کے عازمین حج کیلئے اقدامات کو سراہا ہے اور حج 2019ء میں کامیاب آپریشن پر انہیں مبارکباد دی۔

خرم ثقلین

مزید : صفحہ آخر