ادبی وثقافتی سلسلے ”کچھ یادیں،کچھ باتیں“ کی پانچویں نشست

  ادبی وثقافتی سلسلے ”کچھ یادیں،کچھ باتیں“ کی پانچویں نشست

  



 لاہور (پ ر)لاہور آرٹس کونسل الحمرا میں ماہانہ ادبی وثقافتی سلسلے ”کچھ یادیں،کچھ باتیں“ کی پانچویں نشست کا انعقاد کیا گیا۔جس میں نامور ادیب،شاعر، ڈرامہ نویس اور صحافت کے شعبے کی معتبر شخصیت امجد اسلام امجد نے اپنے فن،خیالات و افکار اور زندگی کے مشاہدات سے حاضرین کو آگاہ کیا۔چیئرپرسن بورڈ آف گورنر لاہور آرٹس کونسل الحمرا منیزہ ہاشمی نے تقریب سے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ امجد اسلام امجدزبان و ادب کا اہم حوالہ اور دنیا میں پاکستان کی پہچان ہیں،انکی شاندار خدمات کے باعث شاعری کا موجودہ دور امجد اسلام امجد کے نام سے منسوب کیا جائے گا،امجد اسلام امجد کو ترکی کی طرف سے نجیب فاضل ایواڈر ملنے سے ہمار ا سر فخر سے بلند ہو گیا ہے۔

انھوں نے کہا کہ امجد اسلام امجد نے ہمارے سماجی، ثقافتی و تہذیبی سفر کو جو خوبصورتی بخشی ہے وہ نوجوان نسل کے لئے مشعل راہ ہے،امجد اسلام امجد نے اپنی قلم سے سچا اور کھرا ادب تخلیق کیا،دنیا ان کے لکھے کو پڑھ کر اس دھرتی کے باسیوں کے جذبوں،آرزورں سے واقفیت حاصل کر رہی ہے۔ایگزیکٹو ڈائریکٹر الحمرا اطہر علی خان نے اس حوالے سے اپنے تاثرات میں کہا کہ اس ادبی و ثقافتی سلسلے کا مقصد نوجوانوں کو اپنے لیونگ لیجنڈکے تجربات سے استفادہ کرنے کاموقع فراہم کرنا ہے،”کچھ یادیں،کچھ باتیں“کی ماہانہ نشست کے ذریعے نوجوانوں کی سماجی، ادبی، اخلاقی وتدرسی راہنمائی کی جا رہی ہے۔ نامور ادیب وشاعر امجد اسلام امجد نے کچھ یادیں،کچھ باتیں کے نشست میں مدعو کرنے پر چیئرپرسن منیزہ ہاشمی کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ نجیب فاضل ایوارڈمجھے نہیں پاکستان کو ملا ہے،ایسے اور لوگ بھی پید ا ہونے چاہیے جو عالمی سطح پر پاکستان کی پہچان بنے،ہرانسان میں کوئی نہ کوئی خوبی ضرور ہوتی ہے، جن معاشروں میں ان خوبیوں کو پرکھنے کا رواج ہوتا ہے وہاں ٹیلنٹ ضائع نہیں ہوتا،میرے اساتذہ نے میری راہنمائی میں اہم کردار ادا کیا،آپ اپنا کام پوری دیانتداری سے کریں وہ ضرور قبولیت کا درجہ حاصل کرئے گا،میری دعا ہے کہ میری قوم کے بچے جس راستے پر بھی چلیں کامیابی و کامرانی ان کے قدم چومے،آپ جو بھی راہ چنے آپ کو اسے کرنے کی صلاحیت ہونی چاہیے۔انھوں نے اپنی زندگی سے سبق آموز واقعات کو نہایت دل چسپ انداز میں بیان کیا جس سے حاضرین مجلس لطف اندوز ہوئے بغیر نہ رہ سکے۔”کچھ یادیں،کچھ باتیں“کی نشست کی مارڈیٹر کے فرائض حسب روایت سمیرا خلیل نے بے حد احسن انداز میں نبھائے۔نشست کے آخر پر امجد اسلام امجد نے نوجوانوں کے سوالات کے جوابات دیئے۔

مزید : کلچر