’پھانسی کے پھندے کے لیے ان کا ناپ لینے گیا تو پھوٹ پھوٹ کر رونے لگے‘نوجوان لڑکی کا گینگ ریپ، مجرموں کو پھانسی دینے والے جلاد نے رونگٹے کھڑے کر دینے والی تفصیلات بتادیں

’پھانسی کے پھندے کے لیے ان کا ناپ لینے گیا تو پھوٹ پھوٹ کر رونے لگے‘نوجوان ...
’پھانسی کے پھندے کے لیے ان کا ناپ لینے گیا تو پھوٹ پھوٹ کر رونے لگے‘نوجوان لڑکی کا گینگ ریپ، مجرموں کو پھانسی دینے والے جلاد نے رونگٹے کھڑے کر دینے والی تفصیلات بتادیں

  



نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت میں ایک لڑکی کو اجتماعی زیادتی کے بعد قتل کردینے والے 4درندوں کو سزائے موت سنائی گئی تھی۔ گزشتہ دنوں جب انہیںپھندہ دینے کے لیے جلاد ان چاروں کے ناپ لینے گیا تو انہوں نے کیا کیا؟ جلاد نے ایسی تفصیلات سنا دی کہ سن کر رونگٹے کھڑے ہو جائیں۔ میل آن لائن کے مطابق ان ملزمان نے بھارتی دارالحکومت نئی دہلی میں ایک چلتی بس میں 23سالہ جیوتی سنگھ نامی طالبہ کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا تھا۔اسی پر ان بدبختوں کی ہوس پوری نہ ہوئی اور انہوں نے لڑکی کے جسم میں لوہے کا راڈ ڈال دیا جس سے اس کواندرونی چوٹیں آئیں۔ بے ہوش ہو جانے پر انہوں نے لڑکی کو ایک جگہ سڑک پر پھینک دیا اور فرار ہو گئے۔

لڑکی کو علاج کے لیے سنگاپور بھجوایا گیا تاہم وہ جانبر نہ ہو سکتی اور دو ہفتے بعد موت کے منہ میں چلی گئی۔ گزشتہ روز بھارتی شہر میرٹھ میں واقع اپنے گھر میں صحافی سے بات کرتے ہوئے پون کمار نامی جلاد نے بتایا کہ”جب میں ان چاروں کے ناپ لینے گیا تو وہ پھوٹ پھوٹ کر رونے لگے۔ “54سالہ پون کمار کا کہنا تھا کہ ”یہ لوگ انسان نہیں درندے ہیں اور ایسے ظالموں کو زندہ رہنے کا کوئی حق نہیں۔ “ رپورٹ کے مطابق ان چاروں کو یکم فروری کو تہاڑ جیل میں پھانسی دی جائے گی۔ان چاروں کو جیل میں الگ الگ سیلز میں رکھا گیا ہے اور سی سی ٹی وی کیمروں سے ان کی مسلسل نگرانی کی جا رہی ہے تاکہ یہ خودکشی نہ کر لیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /جرم و انصاف