’ہم نے آئی ایس آئی کا واٹس ایپ گروپ پکڑلیا‘بھارتی سکیورٹی اداروں کا ایسا دعویٰ کہ ہنسی نہ رُکے

’ہم نے آئی ایس آئی کا واٹس ایپ گروپ پکڑلیا‘بھارتی سکیورٹی اداروں کا ایسا ...
’ہم نے آئی ایس آئی کا واٹس ایپ گروپ پکڑلیا‘بھارتی سکیورٹی اداروں کا ایسا دعویٰ کہ ہنسی نہ رُکے

  



نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارتی سکیورٹی اداروں نے آئی ایس آئی کا ایک واٹس ایپ گروپ پکڑنے کا ایسا مضحکہ خیز دعویٰ کر دیا ہے کہ سن کر ہنسی نہ رکے۔ ٹائمز آف انڈیا کے مطابق بھارتی سکیورٹی اداروں نے ایک 23سالہ محمد رشید نامی نوجوان کو گرفتار کیا ہے جس کے متعلق اداروں کا کہنا ہے کہ وہ آئی ایس آئی کے لیے کام کر رہا تھا اور اس کا کام بھارتی شہریوں کو پاکستان سے آپریٹ ہونے والے اس واٹس ایپ گروپ کا ممبر بنانا تھا۔ اس گروپ کا نام ’زندگی نہ ملے گی‘ تھا۔ لوگوں کو اس گروپ کا ممبر بنانے کے عوض وہ 5ہزار روپے کمیشن لیتا تھا۔

بھارتی سکیورٹی اداروں کے مطابق اس واٹس ایپ گروپ میں بھارت کے حساس مقامات کی تصاویر اور ویڈیوز پوسٹ کی جاتی تھیں۔ اب تک جن مقامات کی تصاویر اور ویڈیوز پوسٹ کیے جانے کا علم ہوا ہے ان میں کاشی وشواناتھ مندر، گیانواپی مسجد، سنکت موچن مندر، کینٹ ریلوے سٹیشن اور دیگر مقامات شامل ہیں۔ اب تک وہ 56بھارتی شہریوں کو اس گروپ کا ممبر بنا چکا تھا۔ اسے اترپردیش سے گرفتار کیا گیا۔ اس کے قبضے سے ایک سم کارڈ بھی برآمد ہوا جس سے وہ پاکستان میں موجود آئی ایس آئی کے لوگوں سے رابطہ کرتا تھا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /بین الاقوامی