غیرملکی طلباء بھی اپنے اہلخانہ کو بلا سکتے ہیں مگر شرط کیا ہے؟ متحدہ عرب امارات نے نئی رہائشی پالیسی کی منظوری دیدی

غیرملکی طلباء بھی اپنے اہلخانہ کو بلا سکتے ہیں مگر شرط کیا ہے؟ متحدہ عرب ...
غیرملکی طلباء بھی اپنے اہلخانہ کو بلا سکتے ہیں مگر شرط کیا ہے؟ متحدہ عرب امارات نے نئی رہائشی پالیسی کی منظوری دیدی

  

دبئی(ویب ڈیسک)  متحدہ عرب امارات میں نئی رہائشی  پالیسی کی منظوری دی گئی ہے جس کے تحت میں غیر ملکی طلبہ اپنے اہل خانہ کو امارات بلانے کے مجاز ہوں گے۔

مؤقراخبار خلیج ٹائمز کے مطابق نئی رہائشی پالیسی کی منظوری کابینہ نے دی جس کے بعد متحدہ عرب امارات کے نائب صدر اور دبئی کے حکمران شیخ محمد بن راشد المکتوم نے بھی اس کی منظوری دے دی ہے، دبئی کے وزیراعظم نے کابینہ کی منظوری کے وقت کہا کہ خطے میں اعلیٰ تعلیم کے فروغ کے لیے متحدہ عرب امارات میں 77 سے زیادہ جامعات (یونیورسٹیاں) ہیں جن میں ہزاروں غیر ملکی طلبہ تعلیم حاصل کررہے ہیں۔

ہم نیوز کے مطابق دبئی کے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ رہائشی پالیسی کی منظوری کے بعد اب غیر ملکی طالب علموں کو اپنے اہل خانہ کو ساتھ رکھنے کی اجازت ہوگی بشرطیکہ اُن کی آمدنی اتنی ہو کہ وہ خاندان کی کفالت کرسکیں۔اخبار کے مطابق متحد عرب امارات کے نائب صدر نے اس کے ساتھ ہی نئی قرض پالیسی کی بھی منظوری دی جس سے مملکت میں مالی اور بینکاری کے شعبوں کو مدد فراہم کی جائے گی۔

مزید :

عرب دنیا -تارکین پاکستان -