’میں قومی ٹیم کی کارکردگی سے مطمئن نہیں‘ مصباح الحق نے بالآخر حقیقت تسلیم کر لی

’میں قومی ٹیم کی کارکردگی سے مطمئن نہیں‘ مصباح الحق نے بالآخر حقیقت تسلیم ...
’میں قومی ٹیم کی کارکردگی سے مطمئن نہیں‘ مصباح الحق نے بالآخر حقیقت تسلیم کر لی
سورس:   Twitter

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ اور سابق ٹیسٹ کپتان مصباح الحق نے کہا ہے کہ میں قومی ٹیم کی کارکردگی سے مطمئن نہیں تاہم ناقص کارکردگی کو ایک طرف رکھ کر اب آگے کی طرف نظریں ہیں، جنوبی افریقہ کے خلاف بہترین کارکردگی پیش کرنے کی کوشش کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق ورچوئل پریس کانفرنس کرتے ہوئے مصباح الحق نے کہا کہ چار روز سے پریکٹس سیشن کر رہے ہیں جس دوران فیلڈنگ پر خاص توجہ دی ہے کیونکہ نیوزی لینڈ کیخلاف سیریز کے دوران فیلڈنگ بہتر نہیں تھی البتہ ہوم سیریز کیلئے بھرپورتیاریاں کر رہے ہیں، انگلینڈ اور نیوزی لینڈ کے خلاف سیریز میں کاردگی اچھی نہ رہی تھی لیکن اب تمام چیزوں کو ایک طرف رکھ کر اس سیریز پر توجہ مرکوز ہے۔

ہیڈ کوچ نے کہا کہ پوری زندگی دباؤ میں کرکٹ کھیلی ہے، کرکٹ میں کارکردگی دکھانی ہوتی ہے، کیا ہو گا کیا نہیں ہو گا، اس بارے میں نہیں سوچ رہا، افواہوں کی کوئی اہمیت نہیں، ہر فیصلہ باہمی اتفاق سے کرتے ہیں، تجزیہ اور بحث کے بعد ہی فیصلے کئے جاتے ہیں، باہمی مشاورت سے پاکستان ٹیم کا اعلان کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ کھیل کے حوالے سے سب پر دباؤ ہوتا ہے، بطور ہیڈکوچ مجھ پر بھی دباؤ ہے، بابر اعظم بطور کپتان بھی بہتر ثابت ہوسکتے ہیں، وقت کیساتھ ساتھ بابر اعظم کی کپتانی میں نکھار آئے گا، ہر کھلاڑی کو اس کا کردار دیا جائے گا، جنوبی افریقہ کی ٹیم مضبوط ہے اس لئے ان سے نمٹنے کی منصوبہ بندی کر رہے ہیں، کراچی کی وکٹ کوئی مختلف نہیں ہوگی، پورے سیزن کی طرح روایتی وکٹ ہوگی، وکٹ کو مختلف نہیں بنایا جا سکتا، ہمیں وکٹ کی اصلیت کا علم ہے۔ 

مصباح الحق کا کہنا تھا کہ کوشش کریں گے کہ اچھی سے اچھی پرفارمنس دیں، جہاں کمی ہے اس کو پورا کرنے کی کوشش کررہے ہیں، ساری زندگی دباؤ میں کرکٹ کھیلی ہے، میرا مستقبل کیا ہوگا فکر اس کی نہیں سیریز کی ہے، محمد یوسف اور ثقلین مشتاق کے آنے کا مقصد بھی بہتری لانا ہے۔

مزید :

کھیل -