ہالینڈ میں نوجوانوں نے کورونا وائرس ٹیسٹنگ سنٹر کو آگ لگادی، وجہ جان کر پاکستانیوں کی حیرت کی انتہا نہ رہے

ہالینڈ میں نوجوانوں نے کورونا وائرس ٹیسٹنگ سنٹر کو آگ لگادی، وجہ جان کر ...
ہالینڈ میں نوجوانوں نے کورونا وائرس ٹیسٹنگ سنٹر کو آگ لگادی، وجہ جان کر پاکستانیوں کی حیرت کی انتہا نہ رہے
سورس:   Twitter/london_bromley

  

ایمسٹرڈیم(مانیٹرنگ ڈیسک) بالآخر لوگوں کے صبر کا پیمانہ لبریز ہو گیا، یورپ کے بیشتر ممالک میں شہری لاک ڈاﺅن اور کورونا وائرس سے متعلق دیگر پابندیوں کے خلاف سڑکوں پر نکل آئے۔ میل آن لائن کے مطابق نیدرلینڈز(ہالینڈ) اور ڈنمارک میں پرتشدد مظاہروں میں پولیس کے ساتھ جھڑپوں اور متعدد لوگوں کے زخمی ہونے کی اطلاعات آ رہی ہے۔ نیدرلینڈز میں مشتعل شہریوں نے کورونا وائرس کے ٹیسٹ کرنے کے لیے بنایا گیا ایک سنٹر نذرآتش کر دیا جبکہ ڈنمارک میں شہریوں نے وزیراعظم میٹ فریڈرکسن کے پتلے کو آگ لگا کر اپنا غصہ نکالا۔اس کے علاوہ کئی املاک اور گاڑیوں کو بھی مشتعل مظاہرین نے آگ لگا دی۔

نیدرلینڈز کے شہر ایندھوین میں مشتعل لوگوں نے ایک سپرمارکیٹ پر دھاوا بول دیا اور توڑ پھوڑ کر ڈالی اور کچھ مظاہرین مارکیٹ سے اشیاءبھی اٹھا لے گئے۔رپورٹ کے مطابق ان یورپی ممالک میں پولیس نے جگہ جگہ آنسو گیس اور پانی کے ذریعے مشتعل مظاہرین کو منتشر کرنے کی کوشش کی۔ سب سے بڑا احتجاج نیدرلینڈز کے دارالحکومت ایمسٹرڈیم اور ڈنمارک کے دارالحکومت کوپن ہیگن میں دیکھنے میں آیا۔ کوپن ہیگن میں پولیس نے لگ بھگ 30لوگوں کو حراست میں بھی لے لیا۔ انٹرنیٹ پر ان مظاہروں کی تصاویر گردش کر رہی ہیں جن میں کہیں پولیس کے کتے مظاہرین کو کاٹ رہے ہیں اور کہیں مظاہرین آگ لگا کر املاک کو خاکستر کر رہے ہیں۔ 

مزید :

بین الاقوامی -کورونا وائرس -