چور ی کی وارداتیں روکنے کے لئے جرگے کا انوکھا فیصلہ،چور کو دیکھتے ہی گولی مارنے کی اجازت ،قتل کا بدلہ بھی نہیں لیا جائے گااورجنازے پر بھی  پابندی

چور ی کی وارداتیں روکنے کے لئے جرگے کا انوکھا فیصلہ،چور کو دیکھتے ہی گولی ...
چور ی کی وارداتیں روکنے کے لئے جرگے کا انوکھا فیصلہ،چور کو دیکھتے ہی گولی مارنے کی اجازت ،قتل کا بدلہ بھی نہیں لیا جائے گااورجنازے پر بھی  پابندی

  

پشاور(ڈیلی پاکستان آن لائن )خیبرپختونخوا کے ضلع خیبر میں قبائلی جرگے نےچوری کی وارداتیں روکنے کے لیے چور کو دیکھتے ہی گولی مارنے کی اجازت دے دی، قتل ہونے والے چوروں کا انتقام بھی نہیں لیا جائے گاجبکہ چوروں کی نماز جنازہ پر پابندی ہوگی۔

سما نیوز کے مطابق ضلع خیبر میں گزشتہ چند ماہ سے چوری کی وارداتوں میں بے تحاشا اضافہ دیکھنے میں آیا ہے،پولیس اور ضلعی انتظامیہ بھی ان وارداتوں کو روکنے میں ناکام رہی،جس کے بعد چوری کی وارداتوں سے تنگ  آکر مقامی قبیلہ سپاہ نے  گرینڈ جرگہ منعقد کیا جس میں قبیلہ سپاہ کے تینوں ذیلی شاخوں کے مشران نے شرکت کی۔

جرگے میں متفقہ فیصلہ کیا گیا کہ چور کو دیکھتے ہی گولی ماری جائے گی جبکہ اس کے خاندان والے اس قتل کا بدلہ نہیں لیں گے، چور کی نمازہ جنازہ پر مکمل پابندی ہوگی اور کوئی بھی چور کی نمازہ جنازہ میں شرکت نہیں کرے گا۔اس موقع پر جرگے نے قبیلے کے چیدہ افراد پر مشتمل ایک کمیٹی بھی تشکیل دی ہے جو ان فیصلوں پر عملدرآمد یقینی بنائے گی اور اس سلسلے میں پولیس، ضلعی انتظامیہ سمیت دیگر اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ بات چیت کرے گی۔

مزید :

قومی -