سرمایہ کاری مالیت میں4ارب 93 کروڑ روپے سے زائد کمی

سرمایہ کاری مالیت میں4ارب 93 کروڑ روپے سے زائد کمی

  

کراچی (اکنامک رپورٹر)کراچی اسٹاک ایکسچینج میں مندی کا تسلسل جاری، کاروباری ہفتے کے دوسرے روز منگل کو بھی مندی رہی تاہم کے ایس ای 100انڈیکس کی 14500 کی نفسیاتی حد پر برقرار رہا، سرمایہ کاری مالیت میںمزید4ارب 93 کروڑ روپے سے زائدکی کمی ، کاروباری حجم گزشتہ روز کی نسبت 106.37 فیصدزائد جبکہ54.41 فیصد حصص کی قیمتوں میں کمی ریکارڈ کی گئی۔ حکومتی مالیاتی اداروں مقامی بروکریج ہاﺅسز ،انفرادی نوعیت سمیت دیگرانسٹی ٹیوشنزاور غیر ملکی سرمایہ کاروں کی جانب سے مخصوص حصص کی قیمتوں میں خریداری کے باعث کاروبار کا آغاز مثبت زون میں ہوا۔ مارکیٹ کے اختتام پر کے ایس ای 100 انڈیکس 15.18پوائنٹس کمی سے 14512.07 پوائنٹس پر بند ہوا۔ مجموعی طور پر 231کمپنیوں کے حصص کے کاروبار ہوا جن میں76کمپنیوں کے حصص کے بھاﺅ میں اضافہ ، 128کمپنیوں کے حصص کے بھاﺅ میں کمی جبکہ 27کمپنیوں کے حصص کے بھاﺅ میں استحکام رہا، سرمایہ کاری مالیت میں4ارب93 کروڑ 10 لاکھ6 ہزار 345 روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی جبکہ سرمایہ کاری کی مجموعی مالیت گھٹ کر 37 کھرب 1ارب 93 کروڑ 33 لاکھ5 ہزار 476روپے ہوگئی۔ مجموعی طور پر کاروباری حجم 5 کروڑ 68 لاکھ 53 ہزار 380 شیئرز رہا جوپیر کے مقابلے میں2 کروڑ 93 لاکھ4ہزار 420 شیئرزکم ہے۔ قیمتوں کے اتارچڑھاﺅ کے حساب سے باٹا پاک لمیٹڈ کے حصص سرفہرست رہے جس کے حصص کی قیمت 31.17 روپے اضافے سے 694.99 روپے اورکلیئرنٹ پاک کے حصص کی قیمت 2.90روپے اضافے سے 207.50 روپے پر بند ہوئی۔ نمایاں کمی یونی لیور فوڈ کے حصص میں ریکارڈ کی گئی جس کے حصص کی قیمت 10.00روپے کمی سے 2890.00 روپے جبکہ نیشنل فوڈز کے حصص کی قیمت 6.22روپے کمی 197.81 روپے پر بند ہوئی۔ منگل کو کے ایس ای30 انڈیکس 25.86پوائنٹس کمی سے 12578.30 پوائنٹس ، کے ایم آئی 30 انڈیکس 80.96پوائنٹس کمی سے 24892.39 پوائنٹس جبکہ کے ایس ای آل شیئرزانڈیکس 13.59 پوائنٹس کمی سے 10203.29 پوائنٹس پر بند ہوا۔

مزید :

کامرس -