بدترین گیس، بجلی لوڈشیڈنگ ، حکمران نے غریبوں کے مسائل سے آنکھیں پھیر لیں

بدترین گیس، بجلی لوڈشیڈنگ ، حکمران نے غریبوں کے مسائل سے آنکھیں پھیر لیں

  

لاہور( لیڈی رپورٹر، تصاویر ذیشان احمد) لاہور شہر میں بد ترین گیس و بجلی کی لوڈشیڈنگ کے حوالے سے مختلف طبقہ فکر سے تعلق رکھنے والی خواتین نے کہاہے کہ ہمارے حکمران مسلمان نہیں ہیں رمضان المبارک میں سحری و افطاری کے اوقات میں لوڈشیڈنگ کی وجہ سے انتہائی مشکلات کا سامنا ہے ، صدر اور وزیر اعظم ہمارے گھروں میں آکر دیکھے کہ گیس و بجلی کے بغیر کھانا پکانا کتنا مشکل ہے۔ موجودہ حکومت نے عوام کو خود کشیوں پر مجبور کر دیا ہے۔ نہ گیس ہے نہ بجلی ہے نہ پانی بے روز گاری روز برووز بڑھتی جارہی ہے اشیائے خوردو نوش کی قیمتیں آسمانوں سے باتیں کر رہی ہیں ان خیالات کا اظہار صغریٰ آسیہ، ارم ، کستور، ثمرہ، امامہ، ثریا، ناسیہ، شمائلہ نے روز نامہ ”پاکستان“ سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہاہے رمضان المبارک برکتوں اور رحمتوں والا مہینہ ہوتا ہے۔ مسلمان کسی بھی مسلمان کو تنگ نہیں کرتا انہوں نے کہا کہ ہمیں تو لگتا ہے کہ ہمارے حکمران مسلمان نہیں ہیں اور اسلام کے دائرہ سے باہر ہیں جن کو یہ ہی نہیں پتہ کہ رمضان کے مہینہ میں لوڈشیڈنگ نہیں کرنی ہے انہوںنے کہا کہ موجودہ حکمرانوں نے ہماری زندگیاں عذاب کر دی ہے لوگ خودکشیاں کرنے پر مجبور ہوگئے ہیں۔ انہوںنے کہا کہ عوام کرے تو کیا کرے ضروریات زندگی کی قیمتوں میں روز بروز اضافے نے خود کشیوں پر مجبور کر دیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ صدر اور وزیر اعظم ایک مرتبہ ہمارے گھروں میں آکر سحری اور افطاری کے وقت دیکھیں کہ کھانا کس طرح بنایا جاتا ہے۔ ہمارے ان حکمرانوں کے گھر تو خود بجلی و گیس نہیں جاتی ہے۔ ان لوگوں کو غریبوں کے مسائل کا کیا پتہ ہو۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے حکمرانوں سے اپیل ہے کہ اب خدا کا خوف کریں اور غریب عوام پر رحم کھائیں تاکہ ہماری زندگیاںسکون میں آجائے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -