نیوشالیمار ہاوسنگ سکیم کا ٹھیکیدار کام ادھورا چھوڑ کر غائب‘مکین سراپا احتجاج

نیوشالیمار ہاوسنگ سکیم کا ٹھیکیدار کام ادھورا چھوڑ کر غائب‘مکین سراپا ...

  

لاہور (جنرل رپورٹر) شمالی لاہور کے علاقہ سلامت پورہ سے ملحقہ نیوشالیمار ہاﺅسنگ سکیم کھنڈرات میں تبدیل ہوگئی ہے۔ مسلم لیگ ن کے مقامی رکن اسمبلی میاں نوید انجم نے ترقیاتی کاموں کا ٹھیکہ دلایا مگر ٹھیکیدار کام ادھورا چھوڑا کرچلا گیا جس سے نیوشالیمار ہاﺅسنگ سکیم سے مہر فیاض کالونی تک علاقے کی واحد مین روڈ ٹوئے کھڈے میں تبدیل ہوچکی ہے۔ گزرنا بھی مشکل ہے، گڑھوں میں جمع پانی ڈینگی مچھر کی افزائش کا باعث بن سکتا ہے۔ ان خیالات کا اظہار مقامی رہائشیوں بابا جمیل احمد، زلیخا خاتون، نائلہ ہارون، امجد اقبال، دھاڑوال، ذیشان منیر، ذکاءاللہ ملک، سید عکاس سعید علی شاہ، عبدالحقین سلیم نے کہا کہ نیوشالیمار ہاﺅسنگ سکیم سلامت پورہ حلقہ کے انتخاب ہے جنہوں نے سیوریج ڈالنے اور سڑک کی تعمیر کا ٹھیکہ من پسند ٹھیکیداروں کو دلایا۔ 6 ماہ قبل ٹھیکیدار سیوریج ڈال کر چلے گئے مگر آج تک سڑک کی تعمیر کا کام شروع نہیں ہوسکا۔ سیوریج ڈالنےکے لیے کھدائی کی جو آج گڑھوں میں تبدیل ہوچکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ واسا نے مین سیوریج ڈالنے کا کام مکمل کرکے باقی سڑک کی سکیم کا کام ٹھیکیدار کو ایواڑ کرکے سڑک کو خستہ حالت میں چھوڑ کر غائب ہوگئی۔ واسا نے مین سیوریج کے ساتھ رہائش گاہوں کے کنکشن کرنے کی بھی ذمہ داری پوری نہیں کی۔ انہوں نے کہا کہ اس کے بعد سڑک کو بنوانے کا کام مقامی TMA (ٹاﺅنمیونسپل ایڈمنسٹریشن) کو دیا گیا۔ یہ بھی میاں نوید انجم کی سربراہی میں مکمل ہونا تھا اس ذمن میں ٹھیکہ بھی جاری کردیا گیا ہے۔ 3 ماہ گزرنے کے باوجود تاحال موقع پر سڑک کی تعمیر نو کا کام شروع نہیں ہوسکا۔ سکیم کے مین گیٹ پر میاں انجم نوید کے نام کی تختی لگادی گئی۔ لگتا ہے روڈ پر خرچ ہونے والی رقم خرد برد ہوگئی ہے۔ سکیم کے مکین گزشتہ 3 ماہ سے سخت دشواریوں کا شکار ہیں۔ سکیم میں ٹوٹی ہوئی سڑک کی وجہ سے جگہ جگہ بارش کا پانی کھڑا ہوجاتا ہے۔ جس کی وجہ سے ڈینگی مچھر کی افزائش کا خطرہ بھی لاحق ہے۔ اس کی بھی ذمہ داری متعلقہ TMA اور واسا انتظامیہ پر ہوگی۔ وزیراعلیٰ سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -