بھارت کے پاس 80 سے 100 جوہری وار ہیڈ موجود ہیں، امریکی سائنسدان

بھارت کے پاس 80 سے 100 جوہری وار ہیڈ موجود ہیں، امریکی سائنسدان

  

 واشنگٹن (آن لائن) امریکی جوہری سائنسدانوں نے دعویٰ کیا ہے کہ بھارت کے پاس 80 سے 100 تک جوہری وار ہیڈ موجود ہیں ۔غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق نیوکلیئر انفارمیشن پروجیکٹ کے ڈائریکٹر ہینس کرسٹن سن اور نیوکلیئر پالیسی کے رابرٹ ایس نوریس نے ایک سائنسی رسالے میں اپنے مضمون میں لکھا ہے کہ بھارت پلوٹونیم کی کل پیداوار کو وار ہیڈ بنانے کیلئے استعمال نہیں کررہا ۔ ایک اندازے کے مطابق بھارت 520 کلو گرام پلوٹونیم پیدا کررہا ہے جس سے 130 جوہری وار ہیڈ ہٹائے جاسکتے ہیں امریکی سائنسدانوں نے مزید کہا ہے کہ بھارت نے پلوٹونیم کی پیداوار کو بڑھانے کیلئے نئے پلوٹونیم پلانٹ تعمیر کرنے کا منصوبہ بنایا ہے انہوں نے مزید کہا کہ بھارت نے 19اپریل 2012ءکو 5000 کلو میٹر تک مار کرنے والے اگنی 5میزائل کا تجربہ کیا ہے جو چین میں کسی بھی ہدف تک پہنچ سکتا ہے تاہم اگنی پانچ میزائل کی تکنیکی بہتری میں مزید کئی سال لکیں گے امریکی سائنسدانوں کے مطابق بھارت کی جانب سے اگنی پانچ کے تجربے سے خطے میں بھارت ، چین اور پاکستان کے مابین سکیورٹی تعلقات میں مزید پیچیدگیاں پیدا ہوئی ہیں اور بھارت کے اگنی پانچ میزائل کے تجربے کے بعد پاکستان نے جوہری وار ہیڈ لے جانے والے شاہین ون بیلسٹک میزائل کا تجربہ کیا ہے ۔

مزید :

صفحہ آخر -