پاکستان میں انٹرنیشنل کرکٹ پوری طاقت سے واپس آچکی: وسیم خان

پاکستان میں انٹرنیشنل کرکٹ پوری طاقت سے واپس آچکی: وسیم خان

  

لاہور(سپورٹس رپورٹر) پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے چیف ایگزیکٹو آفیسر وسیم خان نے کہا ہے کہ ملک میں انٹرنیشنل کرکٹ پوری طاقت سے واپس آ چکی ہے، پرامید ہیں کہ انگلینڈ اور آسٹریلیا وعدے کے مطابق اپنے مستقبل کے ٹور پروگرام (ایف ٹی پی) کے مطابق پاکستان کا دورہ کریں گے انہوں نے کہا کہ ہم نے گذشتہ سال یہ فیصلہ کیا تھا کہ ہم پاکستان میں اپنی اندرونی کرکٹ کھیلیں گے اور تب سے ہم نے اس بات کو یقینی بنانے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی، ہم نے سری لنکا اور بنگلہ دیش کے خلاف دو باہمی کامیاب سیریز کی میزبانی کی، میلبورن کرکٹ کلب (ایم سی سی) کی میزبانی کی، بنگلہ دیش کے خلاف خواتین اور انڈر 16 سیریز کی میزبانی کرنے کے علاوہ ملک میں ایچ بی ایل پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کا انعقاد کیاگیا۔ وسیم خان نے کہا کہ ملک میں 10 سال تک عالمی کرکٹ کے میدان ویران تھے جس کے تناظر میں انہوں نے یقینی طور پر بین الاقوامی کرکٹ کی بحالی کے لئے ایک محفوظ ملک کی حیثیت سے پاکستان کا مثبت تشخص کو اجاگر کیا اور عالمی کرکٹ بحال کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ زمبابوے اور جنوبی افریقہ کے خلاف سیریز شیڈول ہے، تو میں پختہ یقین رکھتا ہوں کہ ملک میں بین الاقوامی کرکٹ پوری قوت کے ساتھ واپس آ چکی ہے۔ایک سوال کے جواب میں وسیم خان نے کہا کہ ہمارا ڈومیسٹک سیزن ستمبر میں شروع ہوتا ہے جس کے ابھی چند ماہ باقی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت صورتحال قدرے غیر متوقع ہے لیکن ہمارا منصوبہ یہ ہے کہ اے سیزن کوبروقت شروع کیا جائے تاہم ہمارے پاس ضرورت پڑنے پر ڈومیسٹک سیزن کو دوبارہ ترتیب دینے میں تاخیر کا بیک اپ منصوبہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے ملک میں بین الاقوامی وعدوں اور ایچ بی ایل پی ایس ایل 2020ء پلے آف کے سلسلہ میں ہم تمام متعلقہ اسٹیک ہولڈرز، کرکٹ بورڈ سے بات کریں گے اور کرکٹ کی بحالی کے بارے میں واضح ہونے کے بعد ہم شیڈول پر کام کریں گے۔ وسیم نے کہا کہ پی سی بی کے لئے کھلاڑیوں اور تمام متعلقہ اسٹیک ہولڈرز کی صحت اور حفاظت کو بہت زیادہ اہمیت حاصل ہے۔ ہمیں یقین ہے کہ لیگ کے پلے آف اور فائنل کو سال کے آخر میں منطقی انجام تک پہنچائیں گے۔ اس کے ملتوی ہونے سے پہلے ٹورنامنٹ کی کامیابی کے ساتھ ہی دنیا بھر میں مداحوں کے ساتھ ساتھ لاکھوں ٹی وی اور ڈیجیٹل شائقین کی دلچسپی برقرار ہے۔

انہوں نے کہا کہ انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) کرکٹ کمیٹی نے کچھ قواعد و ضوابط میں ترامیم سے متعلق سفارشات کا اعلان کیا ہے، ہم ایک بدلتی ہوئی دنیا میں رہ رہے ہیں لہٰذا بطور کھیل ہماری بقا میڈیکل کی مدد سے ہماری صلاحیت پر منحصر ہوگی۔ کھیل میں شامل تمام افراد کی صحت اور حفاظت کے ساتھ ساتھ شائقین کی اسٹیڈیم میں واپسی ہماری ترجیحات میں شامل ہے۔ پی سی بی ان پیشرفتوں پر کڑی نگاہ رکھے ہوئے ہے اور پوری دنیا کے آئی سی سی اور کرکٹ بورڈ دونوں سے مستقل رابطے میں ہے۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -