پی ٹی اے کا فیصلہ کالعد م، اسلام آباد ہائیکورٹ کا پب جی گیم بحال کرنے کا حکم، چینی انکوائری کمیشن کیخلاف درخواستوں پر فیصلہ محفوظ

        پی ٹی اے کا فیصلہ کالعد م، اسلام آباد ہائیکورٹ کا پب جی گیم بحال کرنے ...

  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک) آن لائن گیم پب جی کھیلنے والوں کیلئے خوشخبری سامنے آگئی، اسلام آباد ہائی کورٹ نے پی ٹی اے کا فیصلہ کالعدم قرار دیتے ہوئے گیم بحال کرنے کا حکم دے دیا۔ اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس عامر فاروق نے پب جی پر پابندی کے خلاف محفوظ فیصلہ سنایا۔ عدالت نے پی ٹی اے کا پب جی پر پابندی کا فیصلہ کالعدم قرار دیتے ہوئے کہا پی ٹی اے پب جی گیم کو فوری کھول دے۔عدالت عالیہ نے آن لائن گیم سے متعلق پی ٹی اے کو 7 روز میں دوبارہ فیصلہ کرنے کا حکم دیا جب کہ پب جی کیخلاف شکایات کی تفصیلات اور اس پر پابندی کی وجوہات بھی طلب کر لیں۔ پاکستان میں پب جی کنٹرول کرنے والی کمپنی نے پی ٹی اے فیصلے کو چیلنج کیا تھا۔دریں اثنا اسلام آباد ہائی کورٹ نے چینی انکوائری کمیشن کے خلاف درخواستوں پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔ عدالت نے شوگرملز ایسوسی ایشن کے وکیل مخدوم علی خان کو ہدایت کی کہ بدھ تک تحریری دلائل جمع کرایا جائے۔شوگر ملز ایسوسی ایشن کے وکیل مخدوم علی خان نے جواب الجواب دلائل میں کہا کہ کسی بھی معاملے پر سمری کابینہ ڈویڑن سے بھیجی جاتی ہے، کمیشن کی تشکیل میں بے ضابطگیوں پر دلائل دیتے ہوئے مخدوم علی خان نے سپریم کورٹ 1991 کے فیصلے کا بھی حوالہ دیا۔اس پر اٹارنی جنرل نے 2017 کے فیصلے کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ جس شعبے میں بحران پیدا ہوا اس سے متعلقہ وزارت انکوائری کی سمری بھیجتی ہے، ایسا تب ہوتا ہے جب تحقیقات کا فیصلہ متعلقہ وزارت نے کیا ہو، اس بار چینی اسکینڈل کی تحقیقات کا فیصلہ وزیراعظم کا تھا، وزیراعظم تحقیقات کے احکامات جاری کرنے کا اختیار رکھتے ہیں، یہ اعتراض درست نہیں کہ پہلے کوئی سمری بھیجنا ضروری تھی۔ فریقین کے دلائل مکمل ہونے پر عدالت نے فیصلہ محفوظ کرلیا۔

مزید :

صفحہ اول -