حکومت کلبھوشن کی سزا معاف کرنے کی تیاری کررہی ہے،رانا ثناء اللہ

حکومت کلبھوشن کی سزا معاف کرنے کی تیاری کررہی ہے،رانا ثناء اللہ

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) مسلم لیگ(ن) کے سینئر رہنما رانا ثناء اللہ نے کہا ہے کہ ماضی میں مسلم لیگ(ن) پر غداری اور کفر کے فتوے لگائے گئے، اب پی ٹی آئی حکومت خود ہی بھارتی جاسوس کلببھوشن کی سزا معاف کرنے کی تیاریاں کررہی ہے، حکومت نے کلبھوشن کیلئے خفیہ آرڈیننس جاری کیا جس پر ہمیں اعتراض ہے، اگر یہ پارلیمنٹ میں لایا جاتا تو اور بحث کے بعد منظور ہوتا تو ہمیں کوئی اعتراض نہ ہوتا۔نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے رانا ثناء اللہ نے کہا کہ ہمارے دور میں بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو جب پکڑا گیا اور یہ معاملہ بھارت کی جانب سے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں گیا تو اس پر تحریک انصاف نے جو غداری اور کفر کے فتوے لگائے وہ سب میڈیا کے ریکارڈ پر موجود ہیں اگر ہم ان تمام باتوں کو سامنے رکھیں تو موجودہ حالات میں کلبھوشن کے معاملے پر مسلم لیگ (ن) نے کوئی حکومت کیخلاف فتویٰ جاری نہیں کیا بلکہ ایک دو چیزوں پر پوری اپوزیشن نے اعتراض کیا ہے جن میں وہ خفیہ آرڈیننس بھی شامل ہے جو حکومت نے جاری کیا، ہمیں اس پر صرف یہ اعتراض ہے کہ حکومت اس کو پارلیمنٹ میں بحث کیلئے کیوں نہیں لائی اگر یہ پارلیمنٹ میں معاملہ آتا تو تمام جماعتیں اس پر بحث کرتیں اور اگر یہ منظور ہوبھی جاتا تو اس سے عالمی سطح پر پاکستان کا جذبہ خیر سگالی اجاگر ہوتا۔انہوں نے کہاکہ مقبوضہ کشمیر میں بھارت جو ظلم ڈھا رہا ہے اس پر سلامتی کونسل کیوں ایکشن نہیں لیتی، حکومت سلامتی کونسل پر مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے دباؤ کیوں نہیں ڈالتی؟ اگر کلبھوشن کے معاملے پر حکومت پر کوئی سلامتی کونسل دباؤ ڈال سکتی ہے تو ہم بھی مسئلہ کشمیر کے حوالے سے اس پر دباؤ ڈال سکتے ہیں۔

رانا ثناء اللہ

مزید :

صفحہ اول -